سردم کی لہر ، چڑیا کے جانور بھی ٹھٹھر کر رہ گئے ، سیاحوں کی تعداد میں کمی

سردم کی لہر ، چڑیا کے جانور بھی ٹھٹھر کر رہ گئے ، سیاحوں کی تعداد میں کمی

لاہور(دیبا مرزا سے)شدید سردی کے باعث چڑیا گھر کے جانوروں کے بیمار ہونے کا اندیشہ پیدا ہو گیا ہے ‘اس سلسلے میں چڑیا گھر کی انتظامیہ نے ان کے پنجروں میں ہیٹر تو لگا دئیے ہیں اور انہیں سردی سے بچانے کے لئے دیگر ضروری انتظامات بھی کردئیے ہیں مگر سردی کی وجہ سے ان جانوروں نے اب عوام کو اپنی منہ دکھائی بھی کم کرنا شروع کردی ہے اور تیز دھوپ کے وقت ہی یہ جانور پنجروں سے باہر آتے ہیں وگرنہ یہ جانور بھی خود کو سردی سے محفوظ رکھنے کے لئے اپنے پنجروں کی محفوظ پناہ گاہ میں چھپے رہتے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق جس طرح سے شدید سردی کیو جہ سے انسانوں پر موسمی بیماریوں نے حملے شروع کردئیے ہیں تو ٹھیک اسی طرح سے جانوروں پر بھی اثرات پڑ رہے ہیں اور شدید سردی کے باعث یہ جانور بھی ٹھٹھر کررہ گئے ہیں ۔ یہاں پر یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ شدید سردی کے باعث چڑیا گھر میں سیاحوں کی تعداد بھی کم ہوئی ہے ۔اس حوالے سے جب چڑیا گھر کی انتظامیہ سے رابطہ کیا گیا توانکا کہنا تھا کہ ہم نے جانوروں کو شدید سردی سے بچانے کے لئے ہیٹر اور پنجروں کے اطراف میں گرم کپڑے بھی لگا دئیے ہیں اور ان جانوروں کی خوراک میں بھی ایسی اجزاء شامل کرکے دے رہے ہیں کہ جس کی وجہ سے ان میں شدید سردی کا مقابلہ کرنے کے لئے قوت مدافعت بڑھ سکے اللہ کا شکر ہے کہ ابھی تک تمام جانور تندرست ہیں ۔

چڑیا گھر

مزید : میٹروپولیٹن 1