گردہ کی پتھری اور غدود کا جدید طریقہ علاج،شیخ زید میں آگاہی ورکشاپ

گردہ کی پتھری اور غدود کا جدید طریقہ علاج،شیخ زید میں آگاہی ورکشاپ

لاہور(جنرل رپورٹر)شیخ زاید میڈیکل کمپلیکس لاہور میں سربراہ شعبہ یورالوجی اینڈ کڈنی ٹرانسپلانٹیشن پروفیسر ڈاکٹر حافظ شہزاد اشرف کی زیر نگرانی گردہ کی پتھری اور پروسٹیٹ غدود کی سرجری کے جدید طریقہ علاج کے حوالے سے دو روزہ تربیتی ورکشاپ کا اہتمام کیا گیا، جس میں یو کے سے آئے ہوئے معروف یورالوجسٹ ڈاکٹر عاصم مسعود چوہدری نے صوبہ پنجاب میں پہلی مرتبہ زیر تربیت ڈاکٹرز کو بغیر چیرہ اور کٹ کے بذریعہ لیزر مثانہ کے غدود اور گردہ کی پتھری کے آپریشنز کی جدید تکنیک کی عملی تربیت فراہم کی ۔ورکشاپ میں سرجنز، ڈاکٹرز، نرسنگ اور پیرامیڈیکل سٹاف نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر پروفیسر ڈاکٹر حافظ شہزاد اشرف کا کہنا تھا کہ HoLEP پہلے سے جاری TURP کا جدید ترین نعم البدل ہے جو پروسٹیٹ غدود کو بذریعہ لیزر نکالنے کا جدید طریقہ علاج ہے۔ یہ آپریشن خاص طور پر بڑے غدود یعنی 60 گرام سے زیادہ کیلئے کیا جاتا ہے۔ وہ مریض جو خون پتلا کرنے والی ادویات جیسا کہ کلویپیڈوگرل ، اسپرین، وارفرن نہیں چھوڑ سکتے ان کیلئے یہ واحد طریقہ علاج ہے۔100 گرام سے بڑے غدود کا آپریشن عام طور پر اوپن سرجری سے کیا جاتا ہے، مگر ہولپ کی مدد سے ان کو بھی بغیر چیرے سے کیا جاسکتا ہے، دوران آپریشن خون کا ضیاع انتہائی کم ہوتا ہے، TURP کی نسبتHoLEP آپریشن والا مریض جلدی ڈسچارج ہوجاتا ہے جبکہ خون پتلا کرنے والی ادویات بند کیے بغیر محفوظ سرجری کی جاسکتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہRIRS ایسا عمل جراحی ہے جس میں گردے کے اندر فائبرآپٹک اینڈوسکوپ کی مدد سے سرجری کی جاتی ہے۔اس ضمن میں پروفیسر ڈاکٹر فرید احمد خان، چئیرمین اینڈ ڈین شیخ زاید میڈیکل کمپلیکس لاہور نے ہسپتال میں اس نئی ٹیکنالوجی کے آغاز کو انتہائی خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ شیخ زاید ہسپتال کا شعبہ یورالوجی اس وقت پنجاب کا سب سے مصروف شعبہ ہے جہاں روزانہ کی بنیاد پر ان ڈور، آوٗٹ ڈور اور آپریشنز کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس جدید ترین طریقہ علاج سے اب وطن عزیز کے عوام بھر پور فائدہ اٹھا سکیں گے ۔

شیخ زید

مزید : میٹروپولیٹن 1