حاملہ خواتین کے لئے ایمبولینس سروس کا اجراء انقلابی قدم ہے : عمران نذیر

حاملہ خواتین کے لئے ایمبولینس سروس کا اجراء انقلابی قدم ہے : عمران نذیر

لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ خواجہ عمران نذیر نے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب رورل ایمبولینس سروس برائے حاملہ خواتین کا اجراء خوش آئند ہے اور آج دیہی علاقوں میں ایک فون کال پر حاملہ خواتین کو ہیلتھ سینٹر لیجانے کے لئے ایمبولینس سروس کا گھر پر پہنچنا ایک انقلاب سے کم نہیں جس کا کچھ عرصہ پہلے تصور بھی نہیں تھا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے دیہی علاقوں میں سکلڈ برتھ اٹنڈنٹ کے ذریعے زچگی کی سہولت فراہم کر کے ماں اور بچہ کی زندگیوں کو لاحق خطرات کو کم کر کے ان کی شرح اموات روکنے کی کامیاب کوشش کی ہے ۔ خواجہ عمران نذیر کا کہنا تھا کہ حکومت کی کامیاب حکمت عملی کی بدولت آج صوبے کے 95 فیصد BHU پر میڈیکل آفیسر اور اعلی کوالٹی کی ادویات غریب مریضوں کو مفت دستیاب ہیں جس سے حکومت کے سیاسی مخالفین کو سخت تکلیف پہنچ رہی ہے ۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہارمقامی ہوٹل میں ماں بچہ کی صحت اور نیوٹریشن کے مربوط پروگرام (IRMNCH) کے ڈسٹرکٹ کوارڈینیٹرز کے ماہانہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں ڈائریکٹر(IRMNCH) پروگرام ڈاکٹر مختار حسین سید ، ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر اختر رشید ملک ، چیف منسٹر ہیلتھ روڈ میپ ٹیم کے ارکان ، PITB ، PMU اور دیگر اداروں کے افسران موجود تھے ۔ خواجہ عمران نذیر نے مزید کہا کہ گزشتہ چند سال کے اندر بنیادی مراکز صحت سے لے کر ڈسٹرکٹ ہی کوارٹرز ہسپتال تک 180 ڈگری کی تبدیلیاں آ چکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ DHQ ہسپتال پر CT سکین کی فراہمی ، برن یونٹ اور ICU کا قیام اور اعلی کوالٹی کی ادویات ایسی سہولیات ہیں جس کا تصور چند سال پہلے تک ممکن نہ تھا لیکن وزیر اعلی پنجاب نے ہیلتھ سیکٹر ڈویلپمنٹ پر خصوصی فوکس کرتے ہوئے دل کھول کر فنڈز فراہم کئے ہیں ۔ خواجہ عمران نذیر نے بتایا کہ حکومت (IRMNCH) کے ملازمین کو ریگولر کرنے کے لئے سنجیدہ ہے اور نئی آسامیاں پیدا کرنے کے لئے محکمہ نے ایک SNE تیار کر کے بھجوا دی ہے ۔ وزیر صحت کا کہنا تھا کہ صحت کے شعبہ سے جڑے اور ماں بچہ پروگرام میں فرائض سرانجام دینے والے تمام افسران اور اہلکاران انسانیت کو بچانے کا فریضہ سرانجام دے رہے ہیں جو ملازمت کے ساتھ عبادت بھی ہے ۔

عمران نذیر

مزید : میٹروپولیٹن 1