حدیبیہ ریفرنس کا مقصد ملزمان کو دباؤ میں لانا تھا، دفاع کا موقع بھی نہیں دیا گیا

حدیبیہ ریفرنس کا مقصد ملزمان کو دباؤ میں لانا تھا، دفاع کا موقع بھی نہیں دیا ...

اسلام آباد(صباح نیوز،آئی این پی ) سپریم کورٹ نے حدیبیہ پیپر ملز کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر تے ہوئے کہا ہے کہ ریفرنس کا مقصد ملزمان کو دبا ؤ میں لانے کے سوا کچھ نہ تھا جب کہ ملزمان کو دفاع کا موقع بھی نہیں دیا گیا ،کیس کی دوبارہ تحقیقات نہ کرنے کے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے سے مطمئن ہیں،ریفرنس کو غیر معینہ مدت تک زیرالتوا رکھ کر قانونی عمل کی نفی کی گئی،نیب نے ٹرائل کورٹ میں ملزمان کیخلاف ایک بھی گواہ یا ثبوت پیش نہیں کیا،چار سال تک چیئرمین نیب نے ریفرنس بحالی کیلئے کوئی درخواست نہیں دی۔36صفحات پر مشتمل فیصلہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے تحریر کیا۔ عدالت نے کہاکہ ریفرنس کے وقت نیب پرعزم نظر نہیں آیا اور نیب نے ٹرائل کورٹ میں ملزمان کے خلاف ایک بھی گواہ یا ثبوت پیش نہیں کیا۔نیب کی جانب سے نوازشریف ،شہبازشریف کی خودساختی جلاوطنی کاموقف اپنایاگیاجبکہ خودساختہ جلاوطنی کاموقف حقائق کے برخلاف ہے ۔

مزید : صفحہ اول