پنجاب بھر کی سرکاری یونیورسٹیوں میں 3،3 پرو وائس چانسلرز کی تقرری کا فیصلہ

پنجاب بھر کی سرکاری یونیورسٹیوں میں 3،3 پرو وائس چانسلرز کی تقرری کا فیصلہ

ملتان(جنرل رپورٹر)صوبے بھر کی سرکاری یونیورسٹیز میں تین تین پرو وائس چانسلرز کی تقرری کا فیصلہ، تعیناتی بذریعہ سرچ کمیٹی کی جائے گی تفصیل کے مطابق پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن کی جانب سے سرکاری یونیورسٹیز میں تین تین پرو وائس چانسلرز کی تقرری کی تجاویز دی گئی ہیں۔ پرو وائس (بقیہ 35نمبرصفحہ7پر )

چانسلرز کی تقرری کے لیے سرچ کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔ سرچ کمیٹی کی منظوری وزیر اعلیٰ پنجاب دیں گے جس میں ریٹائرڈ وائس چانسلرز، چیف فنانس آفیسرز، ماہرین تعلیم اور نجی اداروں سے ماہرین کو شامل کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ سرچ کمیٹی اخبارات میں پرو وائس چانسلرز کی تقرری کے لیے اشتہارات جاری کرے گی اور اْمیدواروں کی سکروٹنی کرنے کے بعد ان کے انٹرویوز لے گی۔ پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن کی جانب سے تیار کی گئی سمری کے مطابق سرچ کمیٹی پاپند ہوگی کہ پرو وائس چانسلر کی ایک نشست پر تین تین نام وزیر اعلیٰ پنجاب کو ارسال کیے جائیں گے۔ ان میں سے کوئی بھی ایک اْمیدوار کو پرو وائس چانسلر تعینات کرنے کا اختیار وزیر اعلیٰ کے پاس ہوگا۔پہلے یونیورسٹیو ں میں ایک پرووائس چانسلر تعینات کیا جاتا تھا جبکہ متعدد یونیورسٹیوں میں تو یہ عہدہ برسوں سے خالی چلا آرہا ہے اور قائم مقام وائس چانسلر سے کام چلایا جارہا تھا تاہم اب تین پرووائس چانسلر تعینات کیے جارہے ہیں نئی سمر ی کے مطابق سرکاری یونیورسٹیز میں پرو وائس چانسلر اکیڈمکس، ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ، پرو وائس چانسلر ایڈمنسٹریشن، فنانس اینڈ ایچ آر اور پرو وائس چانسلر ایگزامینیشن اینڈ ایڈمیشن تعینات ہوں گے۔پرو وائس چانسلر کی تقرری تین سال کے لیے کی جائے گی۔

وائس چانسلرز

مزید : ملتان صفحہ آخر