ٹرمپ 16سال تک بے وقوف بنتے رہے ہو تو آپ اب بھی یہی کچھ ہو: حافظ سعید

ٹرمپ 16سال تک بے وقوف بنتے رہے ہو تو آپ اب بھی یہی کچھ ہو: حافظ سعید

لاہور( ایجوکیشن رپورٹر)امیر جماعۃالدعوۃ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ امریکہ کی طرف سے امداد بند کرنے پر حکمران کسی دباؤ کا شکار نہ ہوں۔ دشمن کی امدادیں اس کے منہ پر دے ماریں۔ غیور پاکستانیوں کو ایسی امداد نہیں چاہیے جس سے ملک غلامیوں کا شکار ہوتا ہو۔پہلے پابندیاں لگیں اللہ نے ملک کو ایٹمی قوت سے نوازا‘ اب بھی وہ ایسے حربوں سے پاکستان کا کچھ نہیں بگاڑ سکتے۔ہم اپنے قدموں پر کھڑے ہوں گے تو معاشی مسائل حل ہوں گے۔ اگر امریکہ کہتا ہے کہ وہ مزید بے وقوف نہیں بن سکتا تو حکمران بھی کہہ دیں کہ وہ بھی اب ڈومور کے جواب میں یس سر نہیں کہہ سکتے۔ خطبہ جمعہ کے دوران انہوں نے کہاکہ امریکہ پاکستان نہیں بھارت کا فطری اتحادی ہے۔ وہ پہلے جماعتوں پر پابندیاں لگاتے تھے اب پاکستان کیخلاف لگائی جارہی ہیں۔اس کا سبب یہ ہے کہ وہ سمجھتے ہیں کہ یہاں ایسے لوگ موجود ہیں جو ان کی غلامی قبول کرنے کیلئے تیار نہیں ۔ہم سمجھتے ہیں کہ امریکی پابندیوں سے پاکستان کے آزاد اور مضبوط و مستحکم ملک بننے کا آغاز ہو رہا ہے۔بیرونی دباؤ سے آزاد پاکستان ہی کشمیر، فلسطین اور حرمین شریفین کے تحفظ کا ضامن بن سکتا ہے۔ پاکستان مضبوط ہو گا تو کشمیریوں کو ان کا حق خودارادیت ملے گا اور تیس کروڑ بھارتی مسلمانوں کو بھی مظالم سے نجات ملے گی۔ امریکہ، بھارت اور انکے اتحادی چاہتے ہیں کہ ان کی مذموم سازشوں کیخلاف کوئی آواز بلند کرنے والا نہ ہو۔ حکمرانوں کو چاہیے کہ وہ امریکیوں پر واضح کریں کہ وہ ان کے کہنے پراب اپنی ہی تنظیموں کیخلاف کوئی کاروائی نہیں کریں گے۔ ٹرمپ کہتے ہیں کہ ہم نے سولہ سال پاکستان کو امداددی لیکن ہمیں دھوکہ دیا گیا۔ ہم کہتے ہیں کہ اگر اتنی دیر تک بے وقوف بنتے رہے ہو تو آپ اب بھی یہی کچھ ہو ۔ماضی میں پاکستان پر پابندیاں لگائی گئیں تو اللہ تعالیٰ نے اس ملک کو ایٹمی اور میزائل ٹیکنالوجی سے نوازا۔ اس وقت مسلم حکمران اگرچہ بیرونی قوتوں کی غلامی کا شکار ہیں لیکن مسلمان ملکوں کے عوام کفار کی سازشوں کا بھرپور مقابلہ کر رہے ہیں۔ آج ہمیں فیصلہ کرنا ہے کہ غلامیوں کا راستہ اختیار کرنا ہے یا ہمیں ایک آزاد پاکستان چاہیے۔ اس کیلئے ہمیں حکومت اور عوام کی سطح پر فضول خرچیاں بند اور ملک کو مضبوط کرنا ہو گا۔

مزید : صفحہ آخر