مٹھی میں موٹر سائیکل سواروں کی فائرنگ، 2 بھائی جاں بحق

مٹھی میں موٹر سائیکل سواروں کی فائرنگ، 2 بھائی جاں بحق

تھرپارکر(خصوصی نامہ نگار)تھرپارکر کے شہر مٹھی میں دن دیہاڑے دو تاجر بھائیوں کو نامعلوم دو موٹرسائیکل سوار وں نے قتل کر دیا۔ واقعہ کے خلاف تاجروں نے چھاچھرو اور مٹھی میں مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال کردی۔وزیرداخلہ سندھ اور آئی جی سندھ نے ایس ایس پی عمرکورٹ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ دریں اثناء پاکستان مسلم لیگ(ن) اقلیتی ونگ سندھ کے جنرل سیکرٹری کھیل داس کوہستانی نے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے واقعے میں ملوث افراد کو گرفتارکرکے قرارواقعی سزادینے کا مطالبہ کیاہے ۔تفصیلات کے مطابق مٹھی میں جمعہ کو دو تاجر بھائی دلیپ کمارمہشوری اور چندر کمارمہشوری صبح کے وقت مین بازار میں دکان کھولنے لگے کہ موٹرسائیکل پر سوار دو نامعلوم افراد نے ڈکیتی کی کوشش، جس کے دوران تاجروں نے مزاحمت کی۔ ڈاکوؤں نے فائرنگ کر کے دونوں کو شدید زخمی کر دیا جو سول اسپتال مٹھی میں علاج کے دوران دم توڑ گئے۔واقعہ کے بعد مٹھی میں خوف و ہراس پھیل گیا اور شہریوں کی ایک بڑی تعداد اسپتال پہنچ گئی جبکہ تاجروں نے مٹھی شہر میں احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے تھرپارکر پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ دوسری جانب واقعہ کے خلاف مٹھی اورچھاچھرو میں تاجروں نے مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال کر دی۔پولیس نے ملزمان کی گرفتاری کے لیے علاقے کی ناکہ بندی کرتے ہوئے تحقیقات کا آغازکردیاہے۔وزیر داخلہ سندھ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ایس ایس پی عمرکوٹ کو جامع انکوائری کے احکامات جاری کردیئے ہیں،سہیل انور خان سیال نے کہا کہ واقعہ میں ملوث ملزمان کی جلد سے جلد گرفتاری کو یقینی بنایا جائے ۔انکوائری رپورٹ اور کیس کی تفتیش پر مشتمل تفصیلات برائے ملاحظہ ارسال کی جائیں۔آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے مٹھی میں مبینہ فائرنگ اور دو افراد کے جاں بحق ہونے کے حوالے سے میڈیا رپورٹس پر نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی میرپور خاص سے تفصیلی انکوائری اور پولیس اقدامات پر مشتمل رپورٹ فوری طور پر طلب کرلی ہیں۔دریں اثناء پاکستان مسلم لیگ(ن) اقلیتی ونگ سندھ کے جنرل سیکرٹری کھیل داس کوہستانی نے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ حکومت سندھ عوام کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکام ہوچکی ہے ۔مٹھی جیسے پرامن شہر میں ہندو برادری سے تعلق رکھنے والے 2تاجروں کا بہیمانہ قتل قابل مذمت ہے ۔واقعہ کے ذمہ دار عناصر کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچایا جائے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول