تعلیم کا حصول ملک کی ترقی اور کامیابی کیلئے پہلی سیڑھی ہے : محمد عاطف خان

تعلیم کا حصول ملک کی ترقی اور کامیابی کیلئے پہلی سیڑھی ہے : محمد عاطف خان

مردان (بیورورپورٹ)صوبائی وزیر تعلیم وتوانائی محمد عاطف خان نے 4کروڑ 82لاکھ روپے کی لاگت سے گورنمنٹ سنیٹینیل ماڈل سکول بنک روڈ مردان کے تین منزلہ عمارت کا سنگ بنیاد رکھ دیا ۔ اس موقع پر ممبر صوبائی اسمبلی زاہد درانی ، ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر اعجاز خان، ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر انصار خان، ایکسین سی اینڈ ڈبلیو ڈیپارٹمنٹ اقبال شاہ، ایس ڈی او اصغر خان ، سکول پرنسپل عنایت علی اور دیگر موجود تھے۔ اپنے خطاب میں محمد عاطف خان نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف جس وقت اقتدار میں آئی، تو ہماری پہلی ترجیح تعلیم رہی اور اس وقت سے لیکر آج تک تعلیم کے میدان میں بہت اہم اصلاحات نافذ کیں کیونکہ قومیں تعلیم کے بغیر ترقی نہیں کرسکتی اور کسی بھی ملک کی ترقی اور کامیابی کیلئے پہلی سیڑھی تعلیم ہے، تعلیم کے ذریعے ہی ایک اچھے معاشرے کی تکمیل ہوسکتی ہے ۔ تعلیم کے ذریعے عوام میں شعور اجاگر کرکے ہم اپنے اداروں کو ٹھیک کرسکتے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ جس وقت مجھے یہ محکمہ حوالہ کردیا گیا اس وقت 12ہزار اساتذہ کی کمی تھی، سکولوں کی چارد دیواری ، بنیادی سہولیات ، فرنیچر کی کمی ، اور بیش بہا مسائل تھے مگر ہمار ا ارادہ اور نیت تعلیم کو ٹھیک کرنا تھا۔ ہم نے اپنے ملک و قوم کی خدمت کرنی تھی اور اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے میرٹ پر 40 ہزار اساتذہ بھرتی کرکے اساتذہ کی کمی کو پورا کردیا اور مزید 17ہزار اساتذہ بھی بھرتی کررہے ہیں۔ اسی طرح سکولوں کو بنیادی سہولیات کی کمی پوری کرنے کیلئے سکولوں کو 36ارب روپے دئیے گئے ہیں۔ اور مجھے امید ہے کہ اس سال تک سکولوں میں تمام سہولیات مکمل ہوجائیگی۔ اسی طرح ہم کوالٹی تعلیم پر بھی بھر پور توجہ دے رہے ہیں۔ اساتذہ کو تربیت دے رہے ہیں تاکہ وہ دور جدید کے تقاضوں کے مطابق معماران قوم کی تربیت کرسکیں۔ ہم سرکاری سکولوں میں STEM ایجوکیشن سسٹم متعارف کررہے ہیں جو کہ پورے پاکستان کے سرکاری سکولوں میں رائج نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طریقہ تعلیم کے ذریعے تھیوری کیساتھ پریکٹیکل بھی طالب علموں کو سکھا یا جائیگا۔ اور بنیادی مضامین جیسے کہ سائنس، ٹیکنالوجی ، انجینئرنگ اور میتھس طالب علموں کو پریکٹیکل طریقے سے پڑھائے جاتے ہیں تاکہ وہ نئے دور کے تقاضوں کے مطابق بین الاقوامی طلباء کا مقابلہ کرسکیں گے ، اور رٹہ سسٹم کا مکمل طور پر خاتمہ کیا جاسکے گا۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ تعلیم اب صرف ان سکولوں کو امتحانی ہال الاٹ کریگی۔ جہاں پر کیمروں کا آن لائن سسٹم ہو اور وہ امتحانی بورڈ کیساتھ منسلک ہو ، اسی طرح اساتذہ کرام کی امتحانی ڈیوٹیاں بھی میرٹ پر لگائی جائیگی۔ محمد عاطف خان نے کہا کہ اس سکول کی تعمیر اتی کام کیلئے فنڈ جلد از جلد فراہم کردیا جائیگا تاکہ یہاں کا تعمیراتی کام جلد از جلد مکمل ہو ، نیز اس سکول کو جلد از جلد ہائیر سیکنڈری سکول کی سطح پر اپ گریڈ بھی کردیا جائیگا۔ صوبائی وزیر نے اس سکول کے امتحانی نتائج ، کارکردگی اور اساتذہ کرام کی محنت کو سراہا۔

مزید : کراچی صفحہ اول