وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی ملک شاہ محمد نے ٹریفک جام کا نوٹس لے لیا

وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی ملک شاہ محمد نے ٹریفک جام کا نوٹس لے لیا

پشاور( سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے ٹرانسپورٹ و ماس ٹرانزٹ ملک شاہ محمد وزیر نے زیر تعمیر پشاور بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے کے روٹ پر مختلف سیکشنوں سے متصل تعلیمی اداروں اور ہسپتالوں کو جانے والے راستوں پر ٹریفک جام اور بعض مقامات پر کنٹریکٹر کی جانب سے حفاظتی انتظامات نہ ہونے کا نوٹس لیا ہے۔ اس سلسلے میں بی آر ٹی کے فوکل پرسن خورشید خان کو شکایات موصول ہوئیں تھیں کہ بی آر ٹی منصوبے کی وجہ سے یونیورسٹی روڈ، ہسپتال روڈ اور جی ٹی روڈ پر قائم بعض تعلیمی اداورں اور ہسپتالوں کو جانے والے راستوں پر ٹریفک جام کی وجہ سے طلباء اور مریضوں کو بروقت پہنچنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے جبکہ بی آرٹی کے لئے مختلف مقامات پر کی جانے والی کھدائی کے ساتھ کنٹریکٹر کی جانب سے سیفٹی شیٹس نصب نہ کئے جانے کی وجہ سے ٹریفک حادثات کا بھی خدشہ رہتا ہے۔ وزریر اعلیٰ کے معاون خصوصی نے ان شکایات کا فوری نوٹس لیتے ہوئے ٹریفک حکام کو بی آر ٹی منصوبے کے ساتھ گزرنے والی تمام سڑکوں ، متبادل راستوں اور بالخصوص تعلیمی اداروں اور ہسپتالوں کے سامنے ٹریفک کی بلا تعطل روانی کو یقینی بنانے کے لئے فوری طور پر اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی ہے ۔انہوں نے تمام روٹس پر مزید ٹریفک عملے کی تعنیاتی اور مرکزی مقامات پر وقتا فوقتا عوام کی آگاہی کے لئے ٹریفک عملے کی جانب سے مہم چلانے کی بھی ہدایت کی ۔ملک شاہ محمدنے بی آرٹی کنٹریکٹر کو روٹ کے ساتھ گزرنے والے تمام راستوں پر حفاظتی شیٹس اور رات کے اوقات میں روشنی کا مناسب بندوبست کرنے کی ہدایت کی۔ معاون خصوصی نے کہا کہ بی آرٹی پراجیکٹ پشاور کے عوام کے لئے انتہائی اہم منصوبہ ہے جس کی بدولت لوگوں کو جدید اور پر آسائش سفری سہولیات فراہم ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ ٹریفک حکام ، کنڑیکٹر اور دیگر متعلقہ حکام بھر پور ذمہ داری کا مظاہر کرتے ہوئے منصوبے کی تعمیر کے دوران لوگوں کی آمدورفت کو سہل بنانے اور ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھائیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر