مولانا محمد علی جوہر ایک نڈر اور بہادر صحافی تھے، ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی

مولانا محمد علی جوہر ایک نڈر اور بہادر صحافی تھے، ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی

کراچی (اسٹاف رپورٹر) مولانا محمد علی جوہر ایک نڈر اور بہادر صحافی تھے۔ یہ بات مولانا محمد علی جوہر کی 87 ویں برسی کے موقع پر سوشل اسٹوڈنٹس فورم و جوہر فاؤنڈیشن کے زیرِ اہتمام اور دادا بھائی انسٹیٹیوٹ کے تعاون سے (DIHE) کے آڈیٹوریم میں سیمینار بعنوان ’’محمد علی جوہر ایک نڈر صحافی‘‘ میں صدارتی خطبہ دیتے ہوئے ڈاکٹر پروفیسر شاہانہ عروج کاظمی نے کہی۔ انہوں نے کہا کہ محمد علی جوہر خود ایک جوہر شناس شخصیت کے مالک تھے۔ انہوں نے کامریڈ اور ہمدرد کے نام سے اخبار شائع کرکے مسلمانوں کی بھرپور نمائندگی کی اور صحافت کے معیار کو اتنا بلند کیا کہ انگریز بھی انکی صحافت اور قابلیت پر رشک کرتے تھے۔ انہوں نے صحافت کو ایک نیا رنگ اور اعلیٰ معیار بخشا۔ مولانا محمد علی جوہر ایک ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے۔ انہوں نے حق اور سچ کیلئے اپنی زندگی قربان کردی اور مسلمانوں کو آزادی کا تحفہ دیا۔ قبل ازیں فورم کے چیئرمین نفیس احمد خان نے خطبۂ استقبالیہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہم اپنے اسلاف اور تحریک پاکستان کے رہنماؤں کی یاد تازہ کرکے اپنے نوجوانوں کو انکے کارناموں اور کامیاب زندگی گزارنے کے اصول بتائے ہیں تاکہ یہ نوجوان اپنے بزرگوں کے نقشِ قدم پر چلیں۔ طارق شاداب نے کہا کہ مولانا جوہر مکمل باعمل راہنما تھے انکی تربیت اعلیٰ قدروں اور روایت پر قائم تھی۔ اسی لیے وہ پوری زندگی عملی جدوجہد کرتے رہے۔ خالد ممتاز ایڈووکیٹ نے کہا کہ محمد علی جوہر ایک دردمند دل رکھنے والے راہنما تھے جنہوں نے مسلمانوں کیلئے مسلسل جدوجہد کرتے ہوئے آزادی کا نعرہ بلند کیا اور حق و سچ کیلئے اپنی جان کا نذرانہ پیش کردیا۔ جوہر فاؤنڈیشن کے صدر ڈاکٹر ارشد مسعود نے کہا کہ ہم مولانا محمد علی جوہر کو ہر سال نذرانہ عقیدت پیش کرتے ہیں تاکہ ان کی خدمات کو یاد رکھا جائے۔ ہم مولانا محمد علی جوہر کے نام سے یونیورسٹی قائم کرنا چاہتے ہیں تاکہ نام بلند ہو۔ تقریب سے زیب النساء زیبی، حاجی شریف الدین، سید شکیل احمد، مشیر ٹیپو، عشرت غزالی، نور محمد، محمد علی ارشد، عشرت ارشداور آخر میں HR کی ہیڈ رخشندہ بقائی نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور صدر تقریب ڈاکٹر پروفیسر شاہانہ عروج کاظمی کو فورم کے چیئرمین نفیس احمد خان نے سونیئر پیش کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر