اصغر خان کے انتقال پر پوری قوم افسردہ ہے، رحمت خان وردگ

اصغر خان کے انتقال پر پوری قوم افسردہ ہے، رحمت خان وردگ

کراچی(اسٹاف رپورٹر) تحریک استقلال کے مرکزی صدر رحمت خان وردگ نے شاہین پاکستان‘محبت وخلوص کا پیکر‘اصولوں اور نظریات کے پکے ودیندار رہنما ‘قائد اعظم کی حقیقی تصویر ایئر مارشل اصغر خان کے انتقال پر رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایئر مارشل کے انتقال پر ساری قوم افسردہ ہے۔انہوں نے ایئر مارشل اصغر خان کی فیملی سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے ایئر مارشل کی بخشش اور درجات کی بلندی کی دعا کی اور ان کی فیملی کیلئے صبر جمیل پر اجر عظیم کی دعا کی۔ایئرمارشل اصغر خان وہ عظیم سپاہی تھے جنہوں نے انگریز کمانڈر کے حکم پر پیر پگارا فیملی کے نہتے قافلے میں موجود خواتین ‘بچوں اور بزرگوں پر بمباری کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ایئر مارشل اصغر خان پاکستان ایئرفورس کے پہلے مسلمان ایئر چیف تھے۔بطور ایئر چیف ان کے دور میں پاکستان کا کوئی ایک بھی لڑاکا طیارہ ناکارہ نہیں تھا اور تمام طیارے ہر وقت مکمل طور پر فٹ ہوتے تھے۔اس عظیم فضائی سپہ سالارکو ریٹائرمنٹ کے بعد جب پی آئی اے کا چیئرمین بنایا گیا تو ہماری قومی ایئرلائن کا شمار دنیا کی چند بہترین ایئر لائنز میں ہوتا تھا اور یہ وہی دور تھا جب پی آئی اے کے ماہرین نے دنیا کی دوسری ایئرلائنز کی بنیاد رکھنے میں اپنی مہارت وتعاون پیش کیا۔ایئرمارشل اصغر خان کی ایئر فورس اور پی آئی اے کی سربراہی کے ادوار ان اداروں کیلئے بہترین اور مثالی تھے۔ایئر مارشل اصغر خان نے جب سیاست کا آغاز کیا تو اصولی ونظریاتی سیاست کی بنیاد ڈالی اور ایک سپاہی ہوتے ہوئے بھی جمہوریت پسندی کا عملی ثبوت دیا ۔سیاست میں اپنے بد ترین مخالف ذوالفقار علی بھٹو کی ہر پیشی پر باقاعدگی سے عدالت جاتے تھے تا کہ دوران ٹرائل ان سے کوئی زیادتی نہ ہو حالانکہ یہ وہ دور تھا جب پیپلز پارٹی کا کوئی بھی رہنما عدالت نہیں جاتا تھا۔ایئر مارشل اصغر خان نے اصولوں پر کاربند رہتے ہوئے ضیاء الحق کی جانب سے 5مرتبہ وزیر اعظم بنانے کی پیش کش یہ کہہ کر ٹھکرادی کہ میں عوام کی خدمت کرنے کیلئے سیاست کر رہا ہوں اور کسی کی نوکری نہیں کر سکتا۔ایئر مارشل اصغر خان کا پیشہ ورانہ اور سیاسی کیریئر پاکستانی تاریخ میں ہمیشہ سنہری حروف میں لکھا جاتا رہے گا۔ایئر مارشل اصغر خان کے انتقال سے قوم ایک عظیم رہنما سے محروم ہوگئی ہے اور ان کے انتقال سے سیاست میں پیدا ہونے والا خلاء پر نہیں کیا جا سکتا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر