پنجاب حکومت کی کمپنیوں کا ریکارڈ طلب ،چیف جسٹس نے وی آئی پیز کے لئے سٹرکوں پر رکاوٹیں کھڑی کرنے کا بھی نوٹس لے لیا

پنجاب حکومت کی کمپنیوں کا ریکارڈ طلب ،چیف جسٹس نے وی آئی پیز کے لئے سٹرکوں پر ...
پنجاب حکومت کی کمپنیوں کا ریکارڈ طلب ،چیف جسٹس نے وی آئی پیز کے لئے سٹرکوں پر رکاوٹیں کھڑی کرنے کا بھی نوٹس لے لیا

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں قائم سپریم کورٹ کے 3رکنی بنچ نے پنجاب حکومت کی 56کمپنیوں میں بد عنوانی اور بے ضابطگیوں کے الزامات کا نوٹس لیتے ہوئے تمام ریکارڈ طلب کر لیاہے۔

سپریم کورٹ نے وی آئی پیز کی سہولت کے لئے سڑکوں پر کھڑی کی رکاوٹوں کی تفصیلات بھی مانگ لیں،چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں3 رکنی فل بنچ نے پنجاب حکومت کی چھپن کمپنیوں میں بد عنوانی اور بے ضابطگیوں کے الزامات کے معاملے پر چیف سیکرٹری پنجاب کو تمام ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیا ہے،چیف جسٹس نے ہدایت کی کہ کمپنیوں کے معاملات بارے تمام ریکارڈ آئندہ سماعت پر پیش کیا جائے،چیف جسٹس نے سڑکوں پر رکاوٹیں کھڑی کرنے پر برہمی کا اظہار کیا اور چیف سیکرٹری پنجاب کو باور کرایا کہ آپ کے علم میں ہونا چائیے کہ راستے بند کرنا بنیادی حقوق کی نفی ہے،چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ میں بھی ایک چھوٹا ساوی وی آئی پی ہوں ،شاید میرا ریاستی پروٹوکول میں تیسرا نمبر ہے لیکن میرے گھر کے سامنے سے سٹے بیچنے والا بھی گزرتا ہے ،میں نے کوئی رکاوٹ کھڑی نہیں کی،بتایا جائے کہ جوڈیشل کالونی میں کون بڑا رہتا ہے جس کے کہنے پر رکاوٹیں کھڑی کی گئی ہیں،عدالت نے آئندہ تاریخ سماعت پر عدالتی ہدایت کے مطابق رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور