مسلمان ملک کی وہ جگہ جہاں لوگوں نے اپنے مردہ رشتہ داروں کو قبروں سے نکال کر کپڑے پہنا کر تیار کرنا شروع کردیا کیونکہ۔۔۔

مسلمان ملک کی وہ جگہ جہاں لوگوں نے اپنے مردہ رشتہ داروں کو قبروں سے نکال کر ...
مسلمان ملک کی وہ جگہ جہاں لوگوں نے اپنے مردہ رشتہ داروں کو قبروں سے نکال کر کپڑے پہنا کر تیار کرنا شروع کردیا کیونکہ۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

جکارتہ(مانیٹرنگ ڈیسک) مرنے والے قبروں میں دائمی نیند سو رہتے ہیں لیکن انڈونیشیاءمیں ایک قبیلہ ایسا ہے جو اپنے مرنے والوں کی قبریں کھود کر انہیں باہر نکالتا اور ان کے ساتھ ایسا کام کرتا ہے کہ سن کر آپ کی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق انڈونیشیاءکے جنوبی خطے سلاویسی (Sulawisi)کے علاقے تورجا کا تاراجن نامی قبیلے کے لوگ ہر تین سال بعد اپنے مرنے والوں کی قبریں کھود کر ان کی لاشیں باہر نکالتے، انہیں نئے کپڑے پہناتے، چشمے لگاتے اور سجاتے سنوارتے ہیں۔

دنیا کی واحد خاتون جو اپنا دل سینے میں نہیں بلکہ بیگ میں ڈال کر پھرتی ہے

رپورٹ کے مطابق ان میں سے اکثر ان میتوں کے منہ سے سگریٹ سلگا کر بھی لگا دیتے ہیں، گویا وہ سگریٹ پی رہے ہوں۔ اکثر لوگ ان مردوں کو سجانے کے بعد ان کے ساتھ تصاویر بھی بناتے ہیں۔ اس کام کے لیے قبیلے کے لوگ باقاعدہ تہوار مناتے ہیں جس کا نام ’مانینے‘ (Ma'nene)ہے۔ اس کے معنی ’مردوں کو صاف ستھرا کرنا‘ ہیں۔یہ قبیلہ صدیوں سے یہ تہوار مناتا آ رہا ہے۔ ان کا عقیدہ ہے کہ ایسا کرنے سے مرنے والوں کی روحیں اپنا خیال رکھے جانے پر ان سے خوش ہوتی ہیں اور انہیں انعام دیتی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی