رئیل اسٹیٹ بزنس کو حکومتی سرپرستی کی اشد ضرورت ہے،آئی آر اے اے

رئیل اسٹیٹ بزنس کو حکومتی سرپرستی کی اشد ضرورت ہے،آئی آر اے اے

اسلام آباد ( آن لائن ) اسلام آباد رئیل اسٹیٹ ایجنٹس ایسو سی ایشن کے صدر سردار طاہر محمود نے کہا ہے کہ رئیل اسٹیٹ بزنس کو حکومتی سرپرستی کی اشد ضرورت ہے موجودہ صورتحال میں رئیل اسٹیٹ کا شعبہ بری طرح متاثر ہو رہا ہے حکومت کو چاہیئے کہ اس شعبے کی طرف فی الفور توجہ دے تاکہ یہ شعبہ مشکلات سے نکل کر ترقی کی طرف بڑھ سکے اور معیشت کی ترقی میں فعال کردار ادا کر سکے سی ڈی اے کی طرف سے رئیل اسٹیٹ شعبے کیلئے کمرشل فیس میں اضافہ اس شعبے کے کاروبار کومتاثرکرنے کی وجہ بن رہا ہے لہذا انہوں نے سی ڈی اے سے مطالبہ کیا کہ وہ مذکورہ فیس میں بھی مناسب کمی کرے۔ انہوں نے جنرل سیکرٹری چوہدری زاہد رفیق ، وحید خان،یسین انجم،اسماعیل ملک،عمران بخاری و دیگر کے ہمراہ اپنے بیان میں کہا کہ صنعت و تجارت کی ترقی، روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے، غربت کو کم کرنے اور معیشت کے بہتر فروغ میں رئیل اسٹیٹ کا شعبہ اہم کردار ادا کرتا ہے پاکستان میں سیمنٹ، سٹیل اور بلڈنگ میٹریل سمیت تقریبا 250صنعتوں کا کاروبار رئیل اسٹیٹ شعبے سے وابستہ ہے لیکن ٹیکسوں میں اضافے اور قیمتوں کے تعین کے نئے طریقہ کار نے اس شعبے سے منسلک تمام صنعتوں کا کاروبار متاثرکیا ہے جس وجہ سے بہت سے لوگوں نے اس شعبے میں سرمایہ کاری کرنا چھوڑ دی ہے جو معیشت کیلئے نقصان دہ ہے رئیل اسٹیٹ شعبے سے ہزاروں افراد کا روزگار وابستہ ہے اور اگر اس شعبے کی مشکلات کم کرنے کی طرف فوری توجہ نہ دی گئی تو ملک میں بے روزگاری کو مزید فروغ ملے گا۔

مزید : کامرس