ڈاکٹروں کی تنخواہیں بڑھانے کا بجٹ مختص کرنے پر از خود نوٹس نمٹا دیاگیا

ڈاکٹروں کی تنخواہیں بڑھانے کا بجٹ مختص کرنے پر از خود نوٹس نمٹا دیاگیا

لاہور(نامہ نگارخصوصی) سپریم کورٹ نے پے کمیشن کی سفارشات پرڈاکٹروں کی تنخواہیں بڑھانے کا بجٹ مختص کرنے پر از خود نوٹس کیس نمٹا دیا۔چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں قائم دورکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی،سیکرٹری پرائمری اینڈ ہیلتھ شکیل احمد سمیت دیگر افسران عدالت میں پیش ہوئے،ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے نمائندے ڈاکٹر سلمان اور ڈاکٹر شبیر بھی پیش (بقیہ نمبر32صفحہ12پر )

ہوئے،سیکرٹری صحت شکیل احمد نے عدالت کو بتایا کہ پے کمیشن کی سفارشات پر پنجاب کابینہ نے ڈاکٹروں کی تنخواہیں بڑھا دی ہیں،اضافی تنخواہوں کی مد میں 16.60بلین سالانہ رقم مختص کر دی گئی ہے۔ڈاکٹر سلمان کاظمی نے بتایا کہ ڈاکٹرز کی سرکاری رہائشگاہوں کے بھی مسائل ہیں جس پر چیف جسٹس نے کہاپے کمیشن نے 16.60 بلین سالانہ رقم مختص کرتو دی ہے۔چیف جسٹس نے کہاکہ ناشکرے لوگ انہیں اچھے نہیں لگتے،عدالت نے مذکورہ بالا ریمارکس کے ساتھ پے کمیشن کی رپورٹ کے مطابق ڈاکٹروں کی تنخواہیں بڑھانے پر از خود نوٹس نمٹا دیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر