سال کی پہلی پاکستانی فلم گیارہ جنوری کو سنیماؤں کی زینت بنے گی

سال کی پہلی پاکستانی فلم گیارہ جنوری کو سنیماؤں کی زینت بنے گی

لاہور(فلم رپورٹر)ڈائریکٹر عمارلاثانی اور کنزہ ضیاء کی زیر ہدایت بنی پاکستان کی عالمی شہرت یافتہ کرائم تھرلر فلم ’’ گم‘‘ آئندہ جمعے گیارہ جنوری کو لاہور، کراچی اور اسلام آباد سمیت ملک کے دیگر سنیماؤں میں نمائش کیلئے پیش کی جائے گی جس کی مناسبت سے تشہیری مہم بھی زوروں شور سے جاری ہے ۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ ریلیز سے قبل ’’ گم’’ فلم برطانیہ ، کینیڈا، امریکہ ، سپین اور بھارت سمیت کئی ممالک کے فلم فیسٹیولز میں سکریننگ کیلئے پیش کی گئی جہاں اس نے بیسٹ سکرین پلے، ایکٹر ، ڈائریکٹر اور ایڈیٹنگ کے شعبوں میں سات ایوارڈز بھی حاصل کئے ہیں ۔ ’’ گم ‘‘ کی خاص بات اداکار سمیع خان کی پندرہ برس کی بریک کے بعد فلم سکرین پر واپسی بھی ہے جبکہ ورسٹائل فنکار شمعون عباسی فلم میں ایک وانٹڈ کریمنل کے کردار میں نظر آئیں گے ۔ فلم کی کہانی ایک مجبورباپ اور خطرناک مجرم کے ٹکراؤ پر مبنی ہے جو مختلف حادثات کی بدولت ایک دوسرے کے آمنے سامنے آجاتے ہیں اور پھر یہی سے کہانی میں سسپنس اور ڈرامے سے پردے اٹھنا شروع ہوجاتے ہیں جبکہ مضبوط کہانی اور دلچسپ مکالمے فلم کے سسپنس کو برقرار رکھتے ہیں۔

فلم کی زیادہ تر عکسبندی اسلام آباد کی مارگلہ پہاڑیوں اور اس سے ملحقہ وادیوں میں مکمل کی گئی ہے جبکہ اس کی پروڈکشن میں بین الاقوامی تقاضوں کو مد نظر رکھا گیا ہے ۔

مزید : کلچر