ننکانہ واقعہ میرے وژن کیخلاف،برداشت نہیں کیا جائیگا:وزیر اعظم

ننکانہ واقعہ میرے وژن کیخلاف،برداشت نہیں کیا جائیگا:وزیر اعظم

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے ننکانہ صاحب میں پیش آنیوالے واقعے پر کہا کہ یہ واقعہ میرے وژن کے خلاف اور حکومت، پولیس اور عدلیہ کی جانب سے ناقابل برداشت ہے، اس پر کوئی رواداری نہیں برتی جائے گی۔عمران خان کا ٹوئٹر بیان میں کہنا تھاکہ ننکانہ واقعہ اور بھارت میں مسلمانوں اور اقلیتوں پر حملے میں فرق ہے۔ وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ بھارت میں مسلمانوں اور اقلیتوں پر ہونے والا ظلم مودی اور آر ایس ایس کے وڑن اور ایجنڈے کا حصہ ہے، آر ایس ایس کے غنڈے مسلمانوں کو مارپیٹ رہے ہیں۔عمران خان نے کہا کہ مسلمانوں پر حملہ کرنے والوں کو بھارتی حکومت اور بھارتی پولیس کی حمایت بھی حاصل ہے۔دوسری طرف وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے،بھارت کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے سلامتی کونسل کشمیری عوام سے اپنا وعدہ پورا کرنے میں ناکام ہے، 9 لاکھ بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی جیل میں بدل دیا ہے،پانچ اگست 2019کے بعد سے مقبوضہ کشمیر میں خوف کے سائے منڈلا رہے ہیں، پاکستان حق خود رادیت کے حصول تک مقبوضہ کشمیر کے عوام کی اخلاقی‘ سیاسی‘ سفارتی حمایت جاری رکھے گا۔علاوہ ازیں عمران خان نے ریگولیٹری اداروں کو این او سی اجراء کا طریقہ کار آسان بنانے کی ہدایت کر دی،وزیر اعظم نے مختلف ریگولیٹری اداروں کوہدایت کی ہے کہ لائسنسز،اجازت ناموں اوراین اوسی کااجراء سادہ،آسان اورطے شدہ معیادکے اندریقینی بنائیں،کابینہ ڈویژن اس ضمن میں ایک مربوط ومنظم نظام اورٹائم لائنزپرمبنی ایس اوپیزبنائے۔ وزیر اعظم نے ہدایت کی ہے کہ تمام معلومات متعلقہ ریگولیٹری اتھارٹی کی ویب سائٹ پرفراہم کی جائیں، وزیر اعظم نے کابینہ ڈویژن کومجوزہ طریقہ کارکامسودہ 2ہفتوں میں وزیراعظم آفس کوپیش کرنے کی ہدایت ہے۔دوسری طرف وزیر اعظم عمران خان کل بروزمنگل یوٹیلیٹی سٹورز پیکیج کا افتتاح کریں گے،وفاقی حکومت نے یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن کو 6 ارب روپے جاری کر دیئے ہیں جس میں سے 5ارب ضروری اشیائے خورد و نوش کی خریداری اور ایک ارب روپے ماہانہ سبسڈی کی مد میں جاری کئے گئے۔ یوٹیلٹی سٹور کاپوریشن کے ترجمان کے مطابق وزیر اعظم عمران خان 7 جنوری کو اس پیکج کا باقاعدہ افتتاح کریں گے۔وفاقی حکومت نے جن اشیاء پر سبسڈی دینے کا اعلان کیا ہے ان میں چینی، دالیں، آٹا، گھی اور چاول شامل ہیں۔ وفاقی حکومت نے پاسکوسے2 لاکھ میٹرک ٹن سستی گندم بھی مہیا کی ہے جس سے ملک بھر میں سستے آٹے کی دستیابی یقینی بنائی جائے گی اور عوام کی سہولت میں اضافہ ہوگا۔وفاقی حکومت عوام کی مشکلات کو دور کرنے کے لیے سہولیات میں اضافے کے لئے اس پیکج کو مانیٹر کریگی۔

وزیراعظم 

مزید : صفحہ اول


loading...