پنجاب،بلوچستان میں رم جھم،برفانی ہواؤں نے بھی رنگ جما دیا

پنجاب،بلوچستان میں رم جھم،برفانی ہواؤں نے بھی رنگ جما دیا

  



کراچی،لاہور،کوئٹہ،پشاور،وانا(مانیٹرنگ ڈیسک، ایجنسیاں) پنجاب سمیت ملک بھر کے مختلف علاقوں میں رم جھم کے ساتھ برفانی ہواؤں کیساتھ شدید سردی پہاڑوں پر برفباری کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔پنجاب میں دو روز وقفہ کے بعد سردی کی شدید لہردوبارہ آ گئی،بیشتر علاقوں میں نقطہ انجماد صفر سے گر گیا۔محکمہ موسمیات کے مطابق کوئٹہ سمیت بلوچستان کے شمال مغربی اضلاع میں اتوار کی صبح سے رم جھم اور برفباری جاری ہے جس کے باعث سردی کی شدت میں بھی مزید اضافہ ہوگیاہے۔ زیارت اور گرد ونواح میں تقریباً 6 انچ تک برف پڑ چکی ہے جبکہ برفباری کا سلسلہ آج بھی جاری رہے گا۔ وانا، اعظم ورسک، وادی شکئی، رغزئی اورپاک افغان بارڈر انگوراڈہ میں برف باری کے باعث کئی مقامات پر سڑکیں بند،کئی علاقوں کا ملک سے زمینی رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔جنوبی ایشیا کی طویل ترین سرنگ لواری ٹنل کو جانے والی سڑک پر برف جمع ہونے سے مسافروں کو شدید دشواری کا سامنا ہے۔دریں اثنا ڈیرہ اسماعیل خان اور مضافاتی علاقوں میں کئی روز سے جاری خشک سردی کی لہر کے بعد ہلکی بوندا باندی کا سلسلہ جا ری ہے جو دو روز تک جاری رہیگا۔ خشک سردی سے پیدا ہونے والی بیماریوں کا کافی حد تک خاتمہ ہوگیا۔ بارش کے باعث کئی علاقوں میں بجلی کے فیڈر ٹرپ کرگئے۔گیس اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے شہری ایک بار پھر ایل پی جی گیس سمیت لکڑیاں جلانے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ مافیا نے فائدہ اٹھاتے ہوئے ایل پی جی،لکڑی اور کوئلے کی قیمت میں خودساختہ اضافہ کردیا ہے۔وانامیں خشک لکڑی و کوئلہ افغانستان سمگل کیا جارہا ہے جس کی وجہ سے علاقے میں اس کی قلت ہو گئی ہے اور اسے مہنگے داموں بیچا جا رہا ہے۔  قلات شہر اور گردونواح میں وقفے وقفے کے ساتھ موسلادھار بارش سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے محکمہ موسمیات قلات کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 23  ملی میٹر  بارش ریکارڈ کیا گیا۔بجلی اور گیس مکمل طور پر بند ہونے سے شہری شدید سردی میں ٹھٹھر نے پر مجبور ہو گئے۔شانگلہ میں سردی نے لوگوں کو گھروں میں محصور کردیا،اکثر علاقوں میں درجہ حرارت نقطہ انجماد سے گر گیا۔بالائی علاقوں کے رابطہ سڑکیں بند،بجلی اور مواصلات کا نظام بھی شدید متاثر ہو گیا ہے۔۔محکمہ موسمیات نے ائندہ ہفتے تک وقفے وقفے سے بالائی پہاڑی علاقوں میں بارش اور برف باری کی پیشنگوئی کی ہے۔۔

مزید : صفحہ آخر


loading...