پولیس افسروں کی ماہانہ کرائم میٹنگ‘ بوگس اعداد وشمار تیار کرنیکا انکشاف

پولیس افسروں کی ماہانہ کرائم میٹنگ‘ بوگس اعداد وشمار تیار کرنیکا انکشاف

  



ملتان (وقائع نگار))ملتان سمیت صوبہ بھر ماتحتوں نے سینئر افسران کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کا نیا بہانہ تلاش کرلیا۔سینئرز پولیس آفیسر کی ماہانہ کرائم میٹنگ میں کاروائی فیگر میں اضافی فیگر کے تحت ردوبدل کرکے ڈائری تیار کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔تاکہ اعلی افسران کو گمراہ کرکے سب اچھے کی رپورٹ دی جاسکے۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ملتان سمیت پنجاب بھر میں ہر ماہ باقاعدگی سے ریجنل و ضلعی پولیس افسران ڈویثرن ایس پیز۔ڈی ایس پیز اور ایس ایچ اوز کی کارکردگی کو مانیٹر کرنے کیحوالے سے(بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

ایک میٹنگ منعقد کرتے ہیں۔جس میں ہر ڈسٹرکٹ اپنے اپنے ضلع سے متعلق کرائم میٹنگ کیلئے کاروائی پولیس کی ماہانہ رپورٹ مرتب کرواتے ہیں۔ جسکو وہ میٹنگ میں شیئر کرتے ہیں۔یہاں ذرائع سے اس اپنا نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ ضلعی پولیس افسران کو زیادہ تر ڈسٹرکٹ میں تعینات ڈویثرن افسران۔سرکل ڈی ایس پیز اور ایس ایچ اوز کے ماتحت عملہ بھی اپنے افسران کو ہر ماہ کی یکم تاریخ کو ایک ماہانہ کارکردگی رپورٹ تیار کرکے بھجواتے ہیں۔اور اگر اسی دوران جب ریجنل و ضلعی پولیس افسران کی میٹنگ اجائے۔تو وہی ماتحت عملہ جو نئی فیگر رپورٹ تیار کرتے ہیں۔وہ پہلے سے بھیجوائی گئی فیگر رپورٹ کے بالکل برعکس ہوتی ہے۔اور اس میں بوگس پولیس کارروائی ظاہر کی جاتی ہے۔تاکہ اعلی پولیس افسران کو سب اچھے کی رپورٹ دی جاسکے۔پولیس ذرائع نے بتایا ہے کہ ملتان میں گزشتہ ماہ کے دوران آر پی او کی کرائم میٹنگ منعقد ہوئی تھی۔جس میں ضلع بھر کی پولیس کی جانب سے پولیس کاروائی کے تیار کردہ فیگر تقریبا بوگس تھے۔کیونکہ ماتحت عملے نے اپنے سینیرز پولیس افسران کو گمراہ کرنے کیلئے پہلے سے بھیجوائے گئے فیگروں کے برعکس دوسرے تیار شدہ اضافی فیگر ڈال کر اعلی کاروائی شو کی گئی ہے۔پولیس ملازمین نے پولیس کے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سب اچھے اور بوگس فیگروں کی رپورٹ تیار کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے۔اور اصل کرائم فیگر کی رپورٹ تیار کیئے جائیں۔اور ملوث اہلکاروں کے خلاف سخت تادیبی محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائے۔

انکشاف

مزید : ملتان صفحہ آخر