پوائنٹ آف سیل سافٹ ویئر نصب نہ کرنیوالے تاجروں کیخلاف سخت کارروائی کا فیصلہ

پوائنٹ آف سیل سافٹ ویئر نصب نہ کرنیوالے تاجروں کیخلاف سخت کارروائی کا فیصلہ

  



کراچی(این این آئی)وفاقی حکومت نے ایف بی آر کا سسٹم پوائنٹ آف سیل نصب نہ کرنے والے درجہ اول میں شامل تاجروں ودکانداروں کیخلاف گھیرا تنگ کر دیا ہے اور ان کیخلاف بھاری جرمانوں، کاروبار کی بندش اور قید کی سزاؤں کا اعلان کیا ہے۔ ایف بی آر نے تمام فیلڈ فارمیشنز کو مارکیٹوں میں انفورسمنٹ ٹیمیں بھجواکر نان کمپلائنس تاجروں کی دکانوں اور کاروباری یونٹس کو ایف بی آر کے انٹیگریٹڈ سسٹم پی او ایس میں زبردستی رجسٹرڈ کرنے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔ جو تاجر اور دکاندار اس سسٹم سے(بقیہ نمبر29صفحہ12پر) منسلک نہیں ہونگے ان کو 10لاکھ روپے تک جرمانہ ہوگا جرمانے کے باوجود بھی سسٹم سے منسلک نہ والے تاجروں کو چھ ماہ بعد دوبارہ دس لاکھ جرمانہ ہوگا اور اس کاکاروبار سیل کردیاجائے گا۔ پرچون قیمت پر ٹیکس کی حامل اشیا کی پیکنگ پر پرچون قیمت پرنٹ نہ کرنے والے مینوفیکچر ر اوردرآمد کنند گان پر دس ہزار روپے یا ٹیکس کی رقم کاپانچ فیصد جرمانہ ہوگا۔ جن اشیا پر پرچون قیمت پرنٹ نہیں ہوگی وہ ضبط کر لی جائیں گی۔ سسٹم میں ہیرا پھیری کرنے والے تاجروں کو پانچ لاکھ روپے یا چوری شدہ ٹیکس کے 200فیصد تک جرمانہ ہوگا۔ سسٹم سے منسلک نہ ہونے والے تاجروں کو سترہ فیصد سیلز ٹیکس دینا ہوگا۔ائیر کنڈیشنڈ شاپنگ مال،پلازہ اور سنٹرز میں قائم ایک ہزار مربع فٹ سے بڑی دکانوں کے تاجروں کو نو فیصد ٹیکس دینا ہوگا۔تمام آؤٹ لیٹس پر ہونیوالے لین دین کی سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے ریکارڈنگ کی جائیگی اور ہر سیل پوائنٹ کیلئے اس ریکارڈنگ کو کم ازکم تین ماہ کے عرصہ کیلئے محفوظ رکھنا لازمی ہوگا۔

پوائنٹ آف آرڈر

مزید : ملتان صفحہ آخر