وزیرا علیٰ بلوچستان کو ہٹانے کیلئے مطلوبہ اکثریت موجود ہے، بزنجو

  وزیرا علیٰ بلوچستان کو ہٹانے کیلئے مطلوبہ اکثریت موجود ہے، بزنجو

  



کوئٹہ (آن لائن)قائمقام گورنر بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو نے کہا ہے کہ وزیرا علیٰ بلوچستان میر جام کمال کو ہٹانے کیلئے مطلوبہ اکثریت موجود ہے تاہم پارٹی کو توڑنا نہیں چاہتے جام کمال اچھے وزیراعلیٰ تو نہیں بن سکتے البتہ اچھے پروفیسر بن سکتے ہے۔پارٹی کو کسی بھی صورت کمزور نہیں ہونے دینگے۔پارٹی کیلئے تمام عہدیداروں اور کارکنوں نے بہت جدوجہد کی ہے جب حکومت ڈیڈھ سال میں کوئٹہ (بقیہ نمبر52صفحہ12پر)کے دو سرکاری ہسپتالوں کو بہتر نہیں کرسکے تو بلوچستان کے دیگر ہسپتالوں کو کیسے بہتر کیا جاسکتا ہے ان خیالات کااظہارانہوں نے ایک نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔قائمقام گورنر بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو نے کہا ہے کہ جب سابقہ حکومت کو گرا یا اور ہم اقتدار میں آئیں تو ہم نے مل بیٹھ کر ایک فیصلہ کیا کہ بلوچتان کے اجتماعی مفادات کو حاصل کرنے کیلئے تمام لوگوں کو اکھٹا ہونا ہوگا اور اس کیلئے ایک پارٹی تشکیل دی جو آج بلوچستان عوامی پارٹی کے نام سے ہے مگر بد قسمتی سے پارٹی کو بنا یا اور مرکزی قیادت کی وجہ سے پارٹی کو فعال نہیں کیا گیا کیونکہ ہم سمجھتے تھے کہ جب ہم سب اکھٹے ہونگے تو مرکز سے اپنے حقوق حاصل کرینگے جام کمال تمام ساتھیوں کو ساتھ لیکر چلنے میں ناکام ہوگئے۔اور میں سمجھتا ہوں کہ پارٹی کے صدر کے طور پر وہ مکمل طور پرناکام ہوچکے ہیں جب کوئی شخص پارٹی نہیں چلا سکتا تو حکومت کیسے چلا سکے گا اچھا وزیراعلیٰ تب ثابت ہوسکتا ہے جب عوام کے مسائل کوحل کیا جاسکے۔

بزنجو

مزید : ملتان صفحہ آخر