صوبہ بھر میں سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کی 92ویں سالگرہ کی تقریبات

 صوبہ بھر میں سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کی 92ویں سالگرہ کی تقریبات

  



پشاور‘ اضلاع (سٹی رپورٹر+ نمائندگان) پیپلز پارٹی پشاور سٹی کے زیر اہتمام ملک کے پہلے منتخب وزیراعظم قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو کی 92 سالگرہ کی تقریب شایان شان انداز میں منائی گئی جس میں سٹی ڈسٹرکٹ پشاور کے صدر  ذوالفقار افغانی، جنرل سیکرٹری ذوالفقار اعوان، انور زیب کامریڈ، ایوب شاہ، یاورنصیر، سعید احمد خان، حیدر علی شاہ، عمر خطاب، رفعت اللہ،اکبر خان فضل رحیم، طارق رحیم سمیت صوبائی عہدیداروں کارکنوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر شہید ذوالفقار علی بھٹو شہید محترمہ بینظیر بھٹو ملک و قوم کے شہیدوں ملک کی ترقی خوشحالی اور بلاول بھٹو زرداری کی کامیابی کے لئے دعائیں کی گئیں اور ذوالفقار علی بھٹو کی سالگرہ کا کیک کاٹا گیا قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو کی عظیم الشان خدمات کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا گیا۔جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ذوالفقار افغانی ایوب شاہ انور زیب کامریڈ اور دیگر قائدین نے کہا کہ شہید ذوالفقارعلی بھٹو نے ملک کوآئین اور نظریہ دیا عوام میں سے عوام کی حکومت کا نہ صرف تصور دیا بلکہ عوام کو ریاستی ؤ سیاسی معاملات میں براہ راست شریک بھی کیاذوالفقار علی بھٹو نے ملک کو ویلفیئر اسٹیٹ بنانے کے عملی اقدامات اٹھائے ان تاریخی خدمات پر  زولفقار علی بھٹو کو قائد عوام کا خطاب دیا گیا  قومی ہیرو شہید زولفقار علی بھٹو کی قومی سیاسی عوامی خدمات ہمیشہ  یاد رکھی جایینگی، انہوں نے کہا ہے قوم قائد عوام کی جرات مندی  مستقبل بینی  اور قوم پرستی اور  عوام دوستی کی  معترف ہیشہید بھٹو نیملک کو نا قابل تسخیر نیایا  اور بکھری قوم کو یکجا کیاقائدِعوام کے مشن پر من و عن عمل کرتے رہئں گے  طاقت کا سرچشمہ عوام پپلز پارٹی کی سیاسی میراث ییقائدِ عوام کو ان کی 92 ویں سالگراہ پر خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ کرجعت پرست قوتوں نے گذشتہ 40 سالوں سے شہید بھٹو کی سیاسی میراث کو بدنام کرنے والے ہتھکنڈے استعمال کرنے کے باوجود منہ کی کھائی ہے تاریخ اپنا فیصلہ شہید بھٹو کے حق میں سنا چکی ہیبعوام کی دلوں میں شہید بھٹو کے لیئے موجزن محبت سے عیاں ہے وہ قائداعظم کے بعد واحد رہنما تھے جنہوں نے عوام کو طاقتور بنانے کی جدوجہد کی شہید بھٹو نے قوم کو 1973ع کا متفقہ آئین دے کر ملک میں اتحاد و ہم آہنگی کو فروغ دیا پاکستان کو جوہری پروگرام دے کر ملک کو ناقابل تسخیر قوت بنایا شہید بھٹو نے ملک میں ٹریڈ یونینز قائم کرنے کی اجازت دی اور مزدور دشمن پالیسیوں کا خاتمہ کیا انہوں نے کہا کہ صنعتی اداروں میں مزدوروں کو انتظامی اسٹیک ہولڈر بناکر انہیں آواز دی شہید بھٹو کی سیاسی میراث ان کی قربانی سے بہت مضبوطی کے ساتھ جُڑی اور آئین میں پنہاں ہے  آئین جو بلاامتیاز رنگ، نسل اور نظریئے کے 22 کروڑ پاکستانیوں کو یکساں حقوق کی ضمانت دیتا ہے پیپلز پارٹی ہمیشہ پاکستانیوں کے حقوق و تمام آزادیوں کی محافظ کا کردار نبھاتی رہے گی شہید ذوالفقار علی بھٹو کی سالگرہ پر پیغام جلسہ شرکاء نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو نے پاکستان کی عوام کو سیاسی شعور اور طاقت دی قائدٰ عوام نے آزادی کے ثمرات ملک کے پسماندہ و کمزور طبقات تک پہنچائے شہید بھٹو کو ان قوتوں نے شہید کیا جو حکومتی معاملات میں عوام کی شراکت اور پاکستان کی ترقی سے خائف تھیں پیپلز پارٹی صدر آصف علی زرداری کی سیاسی فہم و فراست اور بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں فکرِ بھٹو پر سختی سے کاربند ہے پیپلز پارٹی قائدِ عوام اور شہید محترمہ بینظیر بھٹو کے مشن کو پایۂ تکمیل پر پہنچاکر دم لے گی۔مردان (بیورورپورٹ) پیپلز پارٹی کے بانی اور سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کے سالگرہ کے موقع پر جگہ جگہ تقاریب منعقد ہوئیں اورجیالوں نے کیک کاٹے مرکزی تقریب سٹی صدر جاوید خان کے حجرے میں منعقد ہوئی جس میں سابق ڈپٹی سپیکر اکرام اللہ شاہد،جنرل سیکرٹری اورنگ زیب خان،عابدعلی شاہ ایڈووکیٹ، پی پی کے ضلعی سیکرٹری اطلاعات نیازعلی یوسفزئی،پیپلز یوتھ کے ڈویژنل صدر عدنان زیب،شہریارخان اور کارکنوں کی بڑی تعدادشریک ہوئی لیبر کالونی وزیرخان تندر کی رہائش گاہ پر سالگرہ تقریب منعقد ہوئی جبکہ گڑھی کپورہ میں بختاور خان کی رہائش گاہ پر کارکنوں نے کیک کاٹا اس موقع پر مقررین نے کہاکہ بھٹو عالم اسلام کے عظیم لیڈر تھے انہوں نے غریب عوام کے حقوق اور جمہوریت کے لئے جان کا نذرانہ دیا لیکن اصولوں پر سودابازی نہیں کی۔ تیمرگرہ (بیورورپورٹ) ضلع دیرپائین میں شہید زوالفقار علی بھٹو کی 92واں یوم ولادت جوش وجذبے سے منایاگیا اس سلسلے میں مرکزی تقریب ڈسٹر کٹ پریس کلب تیمرگرہ میں منعقد ہوئی جس میں پی پی پی کے ضلعی صدر نواب زادہ محمود زیب خان،،ضلعی سیکرٹری اطلاعات عالم زیب خان ایڈوکیٹ،سابق وفاقی وزیر ملک عظمت خان، جائنٹ سیکرٹری شیر محمد ،نجیب اللہ،ماجد اور پارٹی کے کارکنوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی،اس موقع پر شہید زالفقار رعلی بھٹو کا92وان یوم ولادت کا کیک کاٹ گیا تقریب سے مقررین ضلعی صدر نواب زادہ محمو دزیب خان،سابق وفاقی وزیر ملک عظمت خان،شیر محمد اور عالمز یب ایڈوکیٹ نے شہید زالفقا رعلی بھٹو کی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ ذوالفقار علی بھٹو نے اس ملک کے غریب عوام کو زبان دیا اور ظلم وتاریکیوں کا خاتمہ کرکے ملک کو روشنی میں تبدیل کر دیا انھوں نے کہاکہ شہید زالفقار علی بھٹو نے سٹیل مل سمیت واہ فیکٹری کا قیام ان کا عظم کارنامے ہیں مقررین نے کہاکہ پی پی پی نے ہمیشہ مزاحمتی سیاست کی ہے اور ہر ظلم وجبر کے خلاف سیسہ پلائی دیوار کی طرح مقابلہ کیا ہے انھوں نے کہاکہ پی ٹی ائی کی حکومت نے ملک کے تمام ادارے نہ صرف تباہ کیے بلکہ مہنگائی اور بے روزگاری میں کئی گناہ اضافہ کیا مقررین نے کہاکہ پی پی پی نے اپنے دور اقتدار میں ضلع دیر میں ریکارڈ میگا ترقیاتی منصوبے مکمل کرنے سمیت ہزاروں کی تعداد میں نوجوانوں کو روزگار دیا انھوں نے کہاکہ اج عہد کا دن کہ بھٹو ازم کے مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے اور ملک میں حقیقی جمہوریت بحال کریں گے۔ لوئر دیر (نمائندہ خصوصی)ملک بھر کی طرح اتوار کو لوئر دیر میں حق خودارادیت کشمیر کا دن منایا گیا اس سلسلے میں دی ایجوکیٹر سکول سسٹم تیمرگرہ میں ڈسٹر کٹ ہیلتھ افیسر ڈاکٹر شوکت علی کے سربراہی میں تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں سکول کے طلباء نے کشمیریوں سے یکجہتی کیلئے ملی نغمے،ڈبلیوز اور تقاریر پیش کئے جس میں کشمیریوں کو حق خودارادیت دینے کا مطالبہ کیا گیا،بعدازاں سکول کے طلباء اور اساتذہ نے ریلی نکالی اور بھارت کے خلاف اور کشمیریوں کے حق میں شدید نعرہ بازی کی، طلباء نے کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے لگائے ا ور مقبوضہ کشمیر سے کرفیواٹھانے کامطالبہ کیا دوسرے جانب سیاسی کارکنوں اور سول سائٹی پر مشتمل افراد نے علی شاہ مشوانی اور توصیف احمد کی قیادت میں سینکڑوں کی تعداد میں ریسٹ ہاؤس سے دیر چترال روڈ تک ریلی نکالی اور ہندوستان کے خلاف شدید نعرہ بازی کرتے ہوئے کشمیریوں کو حق خوداردیت دینے کا مطالبہ کیا۔ مظاہرین نے عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کے خلاف ورزیوں کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔مظاہرین نے عالمی برادری کے بے بسی پر افسوس کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ کشمیریوں کو حق خودارادیت دینے کی 71سال بیت گئی مگر قرارداد پر عمل درآمد نہ ہوسکا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...