نوشہرہ‘ اہلکاروں نے ڈاکخانے کو تالا لگا دیا‘ پنشنرز رُل گئے

نوشہرہ‘ اہلکاروں نے ڈاکخانے کو تالا لگا دیا‘ پنشنرز رُل گئے

  



نوشہرہ (بیورورپورٹ) نوشہرہ کے علاقہ محب بانڈہ کے ڈاکخانے کے اہلکاروں نے ڈاکخانے کو تالے لگا کر اہلیان علاقہ اور ضیف العمر مرد وخواتین پنشنیرز کو مشکلات سے دوچار کرکے اپنا راج قائم کر رکھا ہے محب بانڈہ کے عوام ڈاکخانے کے اہلکاروں کی من مانیوں اور لوٹ مار کے خلاف نکل آئے ہمیں ایسے اہلکاروں کی کوئی ضرورت نہیں جو کام چور ہوعلاقے کے سیاسی و سماجی شخصیات اورسول سوسائٹی نے ڈاکخانے کے انچارج سمیت دیگر اہلکاروں کا حکومت سے قبلہ درست کرنے کا مطالبہ کردیا تفصیلات کے مطابق نوشہرہ کے علاقہ محب بانڈہ کے عوام اپنے علاقے میں واقع ڈاکخانہ کے اہلکاروں کے خلاف سابق ضلعی کونسلر اور سابق ناظم یونین کونسل محب بانڈہ قیصر خان کی قیادت میں نکل ائے اس موقع پر عمائدین علاقہ سول سوسائٹی اور ضیف العمر مرد و خواتین پنشنئرز بھی موجود تھے عوام نے قیصر خان کو اپنے مشکلات سے آگاہ کیا اس موقع پر قیصر خان نے کہا کہ علاقہ محب بانڈہ کے ڈاکخانے کے اہلکاروں نے گذشتہ کئی روز سے ڈاکخانے کو تالے لگا کر چلے گئے ہیں اور کسی کو کچھ معلوم نہیں کہ کب آئیں گے انہوں نے کہا کہ مذکورہ ڈاکخانے کے اہلکاروں نے اس علاقے کے عوام کا جینا دوبھر کر دیا ہے کیونکہ اگر کوئی شخص یوٹیلٹی بل جمع کرنے جائے تو ان کو 50روپے سے لیکر 100روپے تک کا بقایا رقم چینچ نہ ہونے کا بہانہ بناکر نہیں دیا جا تا اور یہی سلوک ضیف العمرپنشنئرز کے ساتھ بھی روا رکھا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ اس ڈاکخانے کا نہ بلڈنگ کرایہ ہے نہ بجلی و گیس کا بل تو پھر کیونکہ اس علاقے کے عوام بلخصوص ضیف العمر مرد و خواتین کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا رہا ہے انہوں نے کہا کہ ہم حکومت وقت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ علاقہ محب بانڈہ کے ڈاکخانے کے انچارج سمیت دیگر اہلکاروں کا قبلہ درست کریں بصورت دیگر راست اقدام پر مجبور ہو جائیں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...