مسائل کا حل زمینی حقائق کو سمجھے بغیر ممکن نہیں، مرتضیٰ وہاب

مسائل کا حل زمینی حقائق کو سمجھے بغیر ممکن نہیں، مرتضیٰ وہاب

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر ماحولیات و قانون اور ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ شہریوں کی کوشش کے بغیر مسائل حل نہیں ہوں گے خواہ کوئی بھی قانون بنادیا جائے ہمیں تمام مسائل کے حل کے لیے زمینی حقائق کو از سرِ نو سمجھنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کی جانب سے منعقد کیئے گئے کراچی سٹیزن فورم کی کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بحیثیت سندھ حکومت کے نمائندے کے ہمیں کراچی سٹیزن فورم میں بات کرنے کا موقع دیا گیا جس کے لیے ہم اس فورم کے شکر گزار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہر کی صفائی اور بہتر ماحول کے لیے ہم سب کی دو رائے نہیں ہیں اس کے لیے ذمہ داریوں کا تعین کرنا ہمارا اجتماعی فرض ہے شہر کو خوبصورت اور ماحول دوست بنانے کے لیے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ سے بہتر کوئی انتخاب نہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب مجھے صوبہ میں ماحولیات کے مشیر کی ذمہ داری دی گئی تو میں نے کراچی کو سر سبز بنانے کا عہد کیا۔ ہم نے شہر بھر میں شجر کاری کی مہم چلائی اور عوامی نمائندوں کو اس امر پر راغب کیا کہ وہ شہر کے ماحول کو سر سبز بنانے کے لیے آگے آئیں اور لوگوں نے کئی مقامات پر شجر کاری کی۔ انہوں نے کہا کہ پورے لگانے کے بعد اس کی حفاظت اور دیکھ بھال بھی بہت ضروری ہے۔ کئی مرتبہ شجر کاری مہم میں لگائے گئے پودے غائب ہونے کی اطلاعات موصول ہوئیں۔ اس میں صرف حکومت کو دوش دینا مناسب نہیں ہم سب کو اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ شہر میں جگہ جگہ کچرا پھیلنے کا ذمہ کنٹونمنٹ بورڈ یا حکومت نہیں یے بلکہ ہم سب پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ہم شہر کو صاف ستھرا رکھنے میں بحیثیت فرد اپنا کردار بھرپور طریقہ سے نبھائیں اور دوسروں کو بھی اس اصول کا پابند بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے شہر کو آلودہ کرنے والے پلاسٹک بیگز پر پابندی لگائی اور اس کے لیے قانون سازی کی اور حل کے لیے شہریوں میں کپڑے کے تھیلے مفت تقسیم کیئے اب عوام کا بھی اخلاقی فرض بنتا ہے کہ وہ روزمرہ کا سامان لانے اور استعمال کے لیے کپڑے یا کاغذ کے بیگ استعمال کریں۔ 

مزید : صفحہ اول


loading...