حیدرآباد، کشمیریوں کے حق خودارادیت کے طور پر منایا گیا

حیدرآباد، کشمیریوں کے حق خودارادیت کے طور پر منایا گیا

  



حیدرآباد(بیورورپورٹ)ملک بھر کی طرح حیدرآباد میں بھی 5 جنوری کشمیریوں کے حق خودارادیت کے طور پر منایا گیا، اس موقع ڈسٹرکٹ گورنمنٹ سمیت مختلف سیاسی و سماجی اور مذہبی جماعتوں اور سول سوسائٹی کی طرف سے ریلیاں منعقد کی گئیں اور بھارتی جھنڈوں سمیت نریندر مودی کے پتلے جلائے گئے، مظاہرین نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ اپنے کشمیری بھائیوں کے حق خودارادیت کی حمایت جاری رکھیں گئے اور دنیا کے سامنے بھارت کا چھپا ہوامکروہ چہرہ بے نقاب کرکے رہیں گے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کو حق خودارادیت دیا جائے تاکہ وہ اپنے فیصلے خود کرسکیں۔کمشنر آفس شہباز بلڈنگ حیدرآباد سے پوسٹ آفس تک کشمیری بھائیوں کے لیے حق خودارادیت کے طور پر نکالی گئی ریلی کی قیادت کمشنر محمد عباس بلوچ نے کی جبکہ ریلی میں اے ایس پی زاہدہ پروین، اسسٹنٹ کمشنرز، مختلف ضلعی محکموں کے افسران، سول سوسائٹی کے نمائندوں اور معززین شہر نے بڑی تعداد میں شرکت کی، محمد عباس بلوچ نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کی آزادی کے لیے آج  5 جنوری حق خودارادیت کے طور پر دن منایاجارہاہے، بھارت نے کشمیر میں ظلم کی انتہا کردی ہے جوکہ کشمیر میں مظالم کے حوالے سے تاریخی باب لکھا جارہا ہے، انہوں نے کہا کہ پوری دنیا یہ تسلیم کرچکی ہے کہ بھارت کی جانب سے کشمیری مسلمانوں پر بہت زیادہ ظلم کیا جارہا ہے اور اس وقت بھی بھارت نے مسلمانوں پر مزید سختیاں کرنے کے لیے ایک قانون پاس کیا ہے، انہوں نے کہا کہ آج کا دن کشمیریوں کے ساتھ حق خودارادیت کے طور پر منا یا جارہا ہے تاکہ آنے والی نسلوں کو یہ احساس ہو کہ ہم ہرقدم پرکشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں او ان پرہونے والے مظالم خاتمے تک ان کی جدوجہدمیں ان کا بھرپور ساتھ دیتے رہیں گے، انہوں نے کہا کہ بھارت نے نہتے کشمیریوں پر مظالم کے پہاڑ گرادیئے ہیں جہاں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں، کشمیر میں بھارتی فوج کی طرف سے جاری بدترین مظالم سے بھارت کا اصل بھیانک چہرا سامنے آگیا ہے، انہوں نے کہ ہم اپنے کشمیری بھائیوں کی حق خودارادیت کی حمایت جاری رکھیں گئے اور دنیا کے سامنے بھارت کا چھپا ہوامکرو چہرہ بے نقاب کرکے رہیں گے، کشمیریوں کو حق خودارادیت دیا جائے تاکہ وہ اپنے فیصلے خود کرسکیں۔

مزید : صفحہ آخر


loading...