’میرے والد اپنے ہردوست کے خون کا بدلہ لیتے تھے ،ان کا بدلہ کون لے گا‘؟ جنرل سلیمانی کی بیٹی نے روتے ہوئے سوال کیاتوایرانی صدر نے کیاجواب دیا ؟ جانئے

’میرے والد اپنے ہردوست کے خون کا بدلہ لیتے تھے ،ان کا بدلہ کون لے گا‘؟ جنرل ...
’میرے والد اپنے ہردوست کے خون کا بدلہ لیتے تھے ،ان کا بدلہ کون لے گا‘؟ جنرل سلیمانی کی بیٹی نے روتے ہوئے سوال کیاتوایرانی صدر نے کیاجواب دیا ؟ جانئے

  



بغداد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ایرانی صدر نے مقتول ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی صاحبزادی زینب سلیمانی کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سب مل کر جنرل قاسم سلیمانی کا بدلہ لیں گے۔

تفصیلات کے مطابق ایران میں طاقتور جرنیل کی امریکی حملے میں ہلاکت پر جہاں ایرانیوں کی بڑی تعداد غم و غصہ کا شکار ہے وہیں جنرل قاسم سلیمانی کے اہلخانہ بھی امریکا کوسخت جواب دینے کے متمنی ہیں۔

ایرانی صدر حسن روحانی نے جنرل قاسم سلیمانی کے گھروالوں سے ملاقات کی اور انہیں صبر کی دعا دیتے ہوئے کہا اللہ پاک آپ کو اس دکھ اور رنج کا بہتر صلہ دے گا۔اسی دوران جنرل قاسم سلیمانی کی صاحبزادی زینب سلیمانی نے اشکبار آنکھوں کے ساتھ صدر حسن روحانی سے کہا ،’جناب روحانی صاحب ! میرے والداپنے ہر دوست کے خون کا بدلہ لیتے تھے، اب ان کے والد کے خون کا بدلہ کون لے گا‘زینب سلیمانی کے سوال پر حسن روحانی نے کہا کہ ’وہ بدلہ لیں گے‘ ہم سب بدلہ لیں گے آپ اس بارے بالکل بھی فکرمند نہ ہوں'۔

دوسری جانب زینب سلیمانی نے اپنے والد کے جنازہ کے موقع پر کئے گئے خطاب میں امریکی صدر ٹرمپ کو واضح پیغام دیتے ہوئے کہا کہ والدکی موت پر امریکا اور اسرائیل کو سیاہ دن دیکھنا پڑے گا۔انہوں نے امریکی صدر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ دیوانے ٹرمپ یہ مت سمجھنا کہ میرے والد کی موت کے ساتھ سب کچھ ختم ہوگیا۔

اس سے قبل لبنانی ٹی وی کو اپنے والد کے انتقال کے بعد پہلا انٹرویو دیتے ہوئے زینب سلیمانی نے کہا وہ جانتی ہیں کہ ان کے والد کے خون کا بدلہ حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ ہی لیں گے۔

زینب سلیمانی نے مزید کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اس قابل نہیں ہیں کہ وہ شہید ایرانی جنرل کی کامیابیوں کو ختم کرسکیں۔انہوں نے کہا جنرل قاسم سلیمانی کی موت انہیں توڑ نہیں سکتی اور امریکا یاد رکھے کہ ان کا خون رائیگاں نہیں جائے گا۔انہوں نے کہاان کے والد کو ڈرون سے نشانہ بنایاگیاجو ظاہرکرتا ہے کہ امریکی صدرمیں اتنی جرات نہیں کہ وہ ان کا سامنے آکر مقابلہ کرتے۔

واضح رہے کہ جنرل قاسم سلیمانی کو جمعہ کو امریکی ڈرون حملے میں قتل کیاگیاتھا جس کے بعدعراق سے ان کا سرکاری سرپرستی میں سفر آخرت شروع کیاگیاتھا جو کئی شہروں سے ہوتا ہواتہران پہنچا ہے۔یہاں جنازے کے بعد انہیں صوبہ کرمان میں ان کے آبائی گاوں لے جاکر کل بروز منگل کو سپرد خاک کیاجائے گا۔

مزید : بین الاقوامی /عرب دنیا