نیویارک سے شکاگو تک70شہروں میں جنگ کیخلاف مظاہرے،امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کیلئے نئی مشکل کھڑی ہوگئی

نیویارک سے شکاگو تک70شہروں میں جنگ کیخلاف مظاہرے،امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کیلئے ...
نیویارک سے شکاگو تک70شہروں میں جنگ کیخلاف مظاہرے،امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کیلئے نئی مشکل کھڑی ہوگئی

  



نیویارک(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکی شہر نیویارک سے شکاگو اور آکنساس تک ہزاروں امریکی شہری جنگ کیخلاف سڑکوں پر نکل آئے۔ مظاہرین نے’ جنگ نہیں‘، ’عراق سے باہرنکلو‘ اور’ ایران کیخلاف کوئی جنگ نہیں ‘ کی تحریر والے بینرز اور پلے کارڈز اٹھارکھے تھے۔مظاہرین نے امریکی صدر سے مطالبہ کیا کہ وہ عراق پر مزید بم نہ برسائیں اور عراق سے اپنی فوجیں واپس نکالیں۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق نیویارک میں ہونے والے مظاہرے میں ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کی مذمت کی گئی۔مظاہرین نے اس خدشے کا بھی اظہارکیاہے کہ کہیں یہ کشیدگی مشرق وسطیٰ میں ایک نہ ختم ہونے والی جنگ کو جنم نہ دے دے۔

دنیا بھرمیں جنگ کیخلاف کام کرنے والی ایک امریکی تنظیم نے کہا ہے کہ امریکی عوام جنگوں سے اکتا چکے ہیں اور ایران کے ساتھ امن کا مطالبہ کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ ایران کے طاقتور ترین جرنیل اور پاسداران انقلاب کے القدس ونگ کے سربراہ قاسم سلیمانی جمعہ کو بغداد ایئرپورٹ کے قریب امریکی ڈرون حملے میں جاں بحق ہوگئے تھے۔ان کے ساتھ عراقی ملیشیا کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس اور دیگر پانچ افراد بھی لقمہ اجل بن گئے تھے۔

حملے کے بعد سے ایران ، عراق اور شام میں ان کے پیروکار وں میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے۔مختلف مقامات پر ہونے والی نماز جناز ہ میں لاکھوں افرادنے شرکت کی۔ان کی تدفین کل صوبہ کرمان میں ان کے آبائی شہر میں کی جائے گی۔

مزید : بین الاقوامی /عرب دنیا