آپریشن میں تیزی ،مزاحمت کرنیوالے درجنوں دہشت گرد بمباری میں ہلاک

آپریشن میں تیزی ،مزاحمت کرنیوالے درجنوں دہشت گرد بمباری میں ہلاک

  

                    میران شاہ(آئی این پی، این این آئی) آپریشن ضرب عضب میں فوج کو متعدد مقامات پر دہشت گردوں کی طرف سے مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا ہے جس کے بعد آپریشن تیز کردیا گیا ہے ۔ تازہ ترین کارروائیوں میں کئی دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا ہے۔جن میں زیادہ تعداد طالبان کے ساتھی ازبک جنگجوﺅں کی ہے ۔ فوج نے ملک دشمنوں سے جو علاقے واپس لیے ہیں وہاں قومی پرچم لہرادیے گئے ہیں۔ تفصیل کے مطابق فوج کو پیشقدمی کے دوران میں میران شاہ شہر اور بویا گاﺅں میں چھپے دہشت گردوں کی طرف سے مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا جس پر ان کے کئی ٹھکانوں پر طیاروں سے بمباری کی گئی، ان میں سے پانچ ٹھکانے تباہ ہوگئے اور وہاں موجودہ بہت سے دہشت گرد مارے گئے۔ دائیگان ، پوٹی خیل اور محمد خیل کے علاقوں میں بھی فضائی حملے کیے گئے جس سے دہشت گردوں کے کئی ٹھکانے تباہ ہوئے۔ فضائی کارروائی میں دہشت گردوں کے زیر استعمال متعدد غار اور ہتھیاروں کا ایک بڑا ذخیرہ بھی تباہ ہوگیا جبکہ بارودی سرنگوں کا ایک ذخیرہ پکڑا گیا۔ دوسری طرف فوجیوں کے شمالی وزیرستان کے مختلف علاقوں میں جنگجوﺅں کی بچھائی ہوئی بارودی سرنگیں صاف کرتے ہوئے ایک اور جوان شہید ہوگیا۔ جمعہ کے روز بارودی سرنگ سے شہید ہونے والے لانس نائیک فیاض محمد کی نماز جنازہ بنوں میں ادا کی گئی اور پھر ان کی میت ان کے آبائی علاقے مانسہرہ بھجوادی گئی جہاں انہیں پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپردخاک کردیا گیا۔ ذرائع کے مطابق میران شاہ کے ہر دوسرے گھر میں بارودی اور دھماکہ خیز مواد موجود ہے جبکہ اکثر سڑکوں پر بھی بارودی مواد نصب کیا گیا ہے۔اعلٰی سطح کے ایک سرکاری ذریعے نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ غیر ملکی عسکریت پسندوں نے مقامی افراد کو یرغمال بنا رکھاتھا۔

مزید :

صفحہ اول -