بغداد، داعش سے لڑنے کیلئے خواتین کی فوج تیار

بغداد، داعش سے لڑنے کیلئے خواتین کی فوج تیار
بغداد، داعش سے لڑنے کیلئے خواتین کی فوج تیار

  

بغداد (نیوز ڈیسک) عراق میں دولت اسلامی (ISIS) کی یلغار کے بعد عراقی فوج تو کئی شہروں کو چھوڑ کر بھاگ چکی ہے لیکن کرد علاقے نے ISISکے خونخوار جنگجوﺅں کے مقابلے کیلئے خواتین پر مشتمل خصوصی فوج تیار کرلی ہے۔ شدت پسند گروپ ISISI عراق کے کئی اہم شہروں پر قبضہ کرچکا ہے اور اس کے خوف سے عراقی فوج اور پولیس کئی جگہوں سے فرار ہوچکی ہے۔ یہ گروپ عراقی کردستان کے لوگوں کیلئے بھی ایک بڑا خطرہ بن چکا ہے۔ اس خطرے سے نمٹنے کیلئے کردستان نے اپنی غیر روایتی فوج پیشمرگا میں خواتین کو بھی بھرتی کرنا شروع کردیا ہے۔ شمالی عراق کے کرد شہر سلیمانیہ میں خواتین کے فوجی دستے سخت تربیت لے رہے ہیں۔ ان دستوں کا کمانڈر ناہیدہ احمد راشد نامی خاتون کمانڈو کو مقرر کیا گیا ہے۔ کئی شہروں سے فرار ہونے کے بعد عراقی فوج بھی اب سنبھل رہی ہے اور ایک علامتی کامیابی کے طور پر صدام حسین کے گا?ں اوجا کو شدت پسندوں سے آزاد کروالیا گیا ہے۔ ایسی صورتحال میں کرد مردوں کے ساتھ خواتین کا بھی شدت پسندوں کے خلاف ہتھیار اٹھالینا اہمیت کا حامل ہے اور یہ اقدام ISISI کی پیش قدمی کو روکنے میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -