9 سالہ بچی نے حشیش (چرس) کے پودوں بارے میں پولیس کو بتا کر والدین کو پکڑوا دیا

9 سالہ بچی نے حشیش (چرس) کے پودوں بارے میں پولیس کو بتا کر والدین کو پکڑوا دیا
 9 سالہ بچی نے حشیش (چرس) کے پودوں بارے میں پولیس کو بتا کر والدین کو پکڑوا دیا

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) امریکہ میں ایک 9 سالہ بچی نے اپنے گھر میں اگئے گئے حشیش (چرس) کے پودوں کے بارے میں پولیس کو بتا کر اپنے والدین کو پکڑوا دیا کیونکہ ننھی بچی چرس کی بدبو اور اپنے کتے کیلئے خطرات سے پریشان تھی۔ ریاست منی سوٹا کے شہر بارنس ول کے پولیس افسر رائن بیٹل نے بتایا کہ وہ یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ ایک ننھی منی بچی کوئی شکایت لے کر پولیس سٹیشن آئی ہے۔ لیکن جب انہوں نے بچی کا حوصلہ اور اعتماد دیکھا اور اس کی شکایت سنی تو وہ اور بھی حیران ہوئے۔ بچی نے پولیس کو بتایا کہ اس کے والدین نے گھر میں حشیش کے پودے اگارکھے ہیں اور وہ ان سے چرس تیار کرکے خود بھی پیتے ہیں اور علاقے کے لوگوں کو بیچتے بھی ہیں۔ اس نے یہ بھی بتایا کہ وہ چرس کی بدبو سے بہت تنگ ہے اور اسے خدشہ ہے کہ اس کا پیارا کتا چرس کے دھویں کی وجہ سے بیمار ہوسکتا ہے۔ پولیس نے بچی کی دی گئی معلومات کے مطابق گھر کی تلاشی لی تو حشیش کے متعدد پودے گملوں میں اُگے ہوئے پائے گئے اور گھر کے مختلف حصوں سے چرس بھی برآمد ہوگئی۔ ان والدین کے خلاف پہلے بھی بچی کے سامنے چرس پینے پر کارروائی ہوچکی ہے۔ پولیس نے ننھی بچی کو اس کے دادا دادی کے حوالے کرنے کے بعد غیر ذمہ دار نشئی والدین کو حراست میں لے لیا۔

مزید :

صفحہ آخر -