سعودیہ میں سزا یافتہ لوگ غیر ملکیوں کیلئے باعث رحمت بن گئے

سعودیہ میں سزا یافتہ لوگ غیر ملکیوں کیلئے باعث رحمت بن گئے
سعودیہ میں سزا یافتہ لوگ غیر ملکیوں کیلئے باعث رحمت بن گئے

  

جدہ (نیوز ڈیسک) سعودی حکومت کی پالیسی کے باعث جیل سے رہائی پانے والے سزا یافتہ افراد غیر ملکیوں کے لئے باعث رحمت بن گئے ہیں۔ سزا یافتہ اور رہائی پانے والے افراد اور ان کے خاندانوں کی دیکھ بھال کے لئے قائم قومی کمیشن کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر خالد السیبتی نے میڈیا کو بتایا کہ جو لوگ یا کمپنیاں رہائی پانے والے ایک شخص کو ملازمت دیں گی انہیں 2 غیر ملکیوں کے لئے ویزا حاصل کرنے کی سہولت دی جائے گی۔ اس حوالے سے دمام میں محکمہ صحت نے پالیسی کی منظوری دے دی ہے اور اب تک رہائی پانے والے 400 افرد اس پروگرام سے فائدہ اٹھاچکے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ جیل سے رہائی پانے والوں کے لئے ملازمت ڈھونڈنا قریباً ناممکن ہوتا ہے حالانکہ بے شمار قیدی توبہ کرلیتے ہیں اور نئی زندگی شروع کرنے کے عزم سے باہر نکلتے ہیں۔ ابھی کئی سال تک انہیں نوکری نہیں ملتی یا گورنر سے خصوصی خط درکار ہوتا ہے۔ ان کے مطابق محکمہ سماجی امور سے اس بارے میں بات چیت جاری ہے اور امید ہے کہ اس پروگرام کے ذریعے رہائی پانے والوں کو معاشرے میں دوبارہ جگہ بنانے میں معاونت ملے گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -