عطائی نے زائد المیعاد انجکشن لگا کر نوجوان لڑکی مار ڈالی

عطائی نے زائد المیعاد انجکشن لگا کر نوجوان لڑکی مار ڈالی
عطائی نے زائد المیعاد انجکشن لگا کر نوجوان لڑکی مار ڈالی

  

گوجرانوالہ (ویب ڈیسک) نواحی موضع سرانوالی میں عطائی ڈاکٹر نے زائد المیعاد انجکشن لگا کر نوجوان لڑکی کو مار ڈالا۔ غریب مزدور کلیم خاں کی 14 سالہ بیٹی مسکان کے پیٹ میں درد ہوا تو اہلخانہ اسےع طائی ڈاکٹر صدیق ملک کے کلینک پر لے گئے جہاں ڈاکٹر نے لڑکی کو زائد المیعاد انجکشن لگادیا جس کی وجہ سے بچی کی حالت بگڑنے لگی اس کا بازو سرخ ہوگیا اور جسم اسقدر سوج گیا کہ پہنے ہوئے کپڑے پھٹ گئے۔ بچی کی حالت دیکھ کر اس کے لواحقین اسے گوجرانوالہ لے آئے لیکن ڈاکٹرز نے اسے لاہور ریفر کردیا جہاں میو ہسپتال پہنچتے ہی لڑکی دم توڑگئی۔ لڑکی کے والدین نے پوسٹ مارٹم کروانے سے انکار کردیا اور لڑکی کو سپردخاک کردیا۔

مزید : گوجرانوالہ