حملوں کے چند روز بعد استنبول ائیرپورٹ سے 2 مسافر گرفتار، یہ کون ہیں اور سامان سے کیا کچھ برآمد ہوا؟ ایسا انکشاف کہ پورے یورپ کے سکیورٹی اداروں میں کھلبلی مچ گئی

حملوں کے چند روز بعد استنبول ائیرپورٹ سے 2 مسافر گرفتار، یہ کون ہیں اور سامان ...
حملوں کے چند روز بعد استنبول ائیرپورٹ سے 2 مسافر گرفتار، یہ کون ہیں اور سامان سے کیا کچھ برآمد ہوا؟ ایسا انکشاف کہ پورے یورپ کے سکیورٹی اداروں میں کھلبلی مچ گئی

  

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی کے استنبول ائر پورٹ پر دہشت گردی کے خوفناک حملے میں درجنوں شہریوں کی ہلاکت کے چند روز بعد ہی سکیورٹی حکام نے دو خطرناک دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا ہے، جو ترکی میں ایک اور بڑی تباہی برپا کرنے کی تیاری مکمل کر چکے تھے۔

ویب سائٹ مڈل ایسٹ آئی کی رپورٹ کے مطابق استنبول کے اتاترک ائیرپورٹ پر ہونے والے خوفناک حملے کے بعد قانون نافذ کرنے والے اداروں نے داعش کے دو مشتبہ کارکنوں کو گرفتار کیا ہے۔ دوگن نیوز ایجنسی کے مطابق دونوں کا تعلق کرغستان سے ہے اور ان کی عمریں 25 اور 35 سال بتائی گئی ہیں۔ پولیس کو ان کے پاس دہشت گردی میں استعمال ہونے والے جدید ترین آلات اور اشیاءکی بڑی تعداد ملی ہے، جن میں رات کی تاریکی میں دیکھنے والی دوربینیں، ملٹری یونیفارم اور مختلف ناموں سے بنائے گئے پاسپورٹ شامل ہیں۔

’ہم نے اسرائیل پر حملے کیلئے ایک لاکھ میزائل تیار کرلئے ہیں‘ خوفناک ترین دھمکی دے دی گئی، امریکہ اور اسرائیل دونوں کی نیندیں اُڑگئیں

ترک انٹیلی جنس ایجنسیوں کا خیال ہے کہ استنبول میں 29 جون کو ہونے والا حملہ بھی داعش نے کیا، جس میں 45افراد جاں بحق ہوئے، جن میں 19 غیر ملکی بھی شامل تھے۔ اس حملے میں 200 سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے جن میں سے 47 ابھی تک ہسپتال میں ہیں۔

رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ روس سے آزاد ہونے والی وسطی ایشیاءکی ریاستوں سے نوجوانوں کی قابل ذکر تعداد داعش میں شامل ہوچکی ہے۔ یہ نوجوان ترکی اور یورپ کیلئے نفرت کے جذبات رکھتے ہیں اور یورپی ایجنسیاں ان کی داعش میں شمولیت کو ترکی اور یورپ کے لئے بڑا خطرہ قرار دے رہی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی