عید کے بعد حکمرانوں کو سڑکوں پر گھسیٹیں گے،چودھری منظور

عید کے بعد حکمرانوں کو سڑکوں پر گھسیٹیں گے،چودھری منظور

لاہور( نمائندہ خصوصی) پیپلز پارٹی نے گزشتہ روز پانچ جولائی کو یوم سیاہ کے طور پر منایا۔ اس سلسلے میں پر یس کلب لاہور میں بھٹوز فورم کے زیر اہتمام ایک سیمینار منعقد کیا گیا جس سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی پنجاب کی آرگنائزنگ کمیٹی کے رکن چودھری منظور احمد نے اعلان کیا کہ عید کے بعد ہم بھی مینار پاکستان لاہور میں وزیر اعلی پنجاب کی جگہ پر حکومت کی طرف سے کی گئی کسانوں کے ساتھ زیادتیوں‘ مہنگائی بے روز گاری‘ بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور پانامہ لیکس میں حکمرانوں کا نام آنے کے خلاف ایک احتجاجی کیمپ لگائیں گے اب بلاول بھٹو بھی ان کے شہر میں احتجاج کو لیڈ کریں گے چودھری نثار اور وزیر اعلی پنجاب ابھی نہ چیخیں ماریں ابھی تو بلاول نے پنجاب میں احتجاج شروع کرنا ہے اب ہم ان کو ان کے شہر کی سڑکوں پر گھسیٹیں گے اور ان سے عوام کے ساتھ کی گئی زیادتیوں کا حساب لیں گے ۔ بلاول بھٹو نے احتجاج کے حوالے سے اپنی حکمت عملی طے کر لی ہے اور کسی کے ساتھ ہم نے کنٹینر پر چڑھنے کا فیصلہ نہیں کیا ہم اپنے پروگرام کے مطابق تحریک چلائیں گے۔بلاول عید کے بعد بیرون ملک سے سیدھا گیارہ یا بارہ جولائی کو لاہور آئیں گے اور آزاد کشمیر کے الیکشن کو بھی لیڈ کریں گے اسحاق ڈار نے غیر قانونی طریقے سے میاں منشاء کو نواز نے کے لئے پہلی بار سٹیٹ بینک سے ایک چیک کے زریعے پانچ سو ارب روپے کی ادائیگی کرواکر 125 ارب روپے کی دیہاڑی لگائی ‘ ایل ڈی اے سٹی میں حکومت پنجاب نے اربوں کی دیہاڑی لگائی ہم نے ان سے ان چیزوں کا حساب لینا ہے۔ اب ہم نے میدان لگانے کا فیصلہ کر لیا ہے اور اس سے پیچھے نہیں ہٹیں گے ۔مرکزی رہنما پیپلز پارٹی نوید چودھری نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے دل سے بھارت کی محبت ختم نہیں ہوئی ہے اسی لئے انہوں نے یہاں پر بھی جاتی امراء بنایا ہے لیکن اب ان کو بیرون ملک جانے کی اجازت نہیں ملے گی اور بھارت کے سوا انہیں کسی ملک میں پناہ نہیں ملے گی چودھری نثار اور وزیراعلی پنجاب بلاول بھٹو کے خلاف بیان بازی کرکے اپنی کوتاہیوں کو نہیں چھپا سکتے ہم آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے یہ پوچھنا چاہتے ہیں کہ انہوں نے سندھ میں تو آپریشن شروع کروادیا پنجاب میں بھی آپریشن شروع کرنے کی بات کی تھی پنجاب میں آپریشن ابھی تک بھی کیوں شروع نہیں کیا گیا کیوں پنجاب کے حکمران سندھ کے عوام کو ماضی کی طرح جاگ پنجاب جاگ والی پوزیشن پر لا رہے ہیں۔ مرکزی رہنما میاں محمد ایوب،بیرسٹر عامر حسن ،الطاف قریشی ‘واجد علی شاہ ‘ عارف خان ‘ سکندر شاہ‘ زاہد زوالفقار خان ‘ زوہیب بٹ‘ منور انجم ‘ شیخ ظفر اقبال‘ سہیل ملک ‘ شاہد ہ جبین ‘ راؤ شجاعت علی ‘ بشارت صدیقی سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا ۔تقریب کے دوران جیالے ضیاء الحق کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کرتے رہے اور پیپلز پارٹی کے قائدین کے حق میں بھی نعرے لگاتے رہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1