حکومت اضافی گندم کو برآمد کرنے کی اجازت دے، فلور ملز ایسوسی ایشن

حکومت اضافی گندم کو برآمد کرنے کی اجازت دے، فلور ملز ایسوسی ایشن

لاہور ( کامرس رپورٹر)پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن(پنجاب) کے چےئرمین چوہدری افتخار احمد مٹو اور گروپ لیڈر عاصم رضا و میاں ریاض نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت سمندر اور ڈرائی پورٹ کے ذریعے فوری پر اضافی گندم اور گندم کی مصنوعات کی برآمد کی اجازت دے۔اضافی گندم کو خراب کرنے اور گندم کی دیکھ بھال پر آنے والے اضافی اخراجات اٹھانے کے بجائے ایکسپورٹ کر کے ملک کے لیے قیمتی زرمبادلہ کمایا جائے ، گندم اور گندم کی مصنوعات کی ایکسپور ٹ کے ذریعے ملک کی 70فیصدبند پڑی فلور ملنگ انڈسٹری بھی بحال ہو جائے گی جبکہ مذکورہ انڈسٹری سے وابستہ مزدور طبقہ کے افراد کو روزگار کے مواقعے بھی میسر آسکیں گے ۔فلور ملز ایسوسی ایشن کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت فوری طور پر انٹرنیشنل مارکیٹ میں گندم کی قیمتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ریبیٹ دے تاکہ افغانستان اور ایران سمیت دیگر ممالک کو گندم اور گندم کی مصنوعات کی ایکسپورٹ شروع کی جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پور ی دنیا میں گندم کی خرید و فروخت جاری ہے لہذا پاکستان کو بھی اضافی گندم ایکسپور ٹ کر کے اس موقع سے استفادہ حاصل کرنا چاہیے۔فلور ملز ایسوسی ایشن کے رہنماؤں نے کہا کہ وزیر اعظم اور وفاقی وزیر برائے فوڈ سکیورٹی سکندر حیات بوسن گندم اور گندم کی مصنوعات کی ایکسپورٹ میں خصوصی دلچسپی لیتے ہوئے فوری طور پر ایکسپور ٹ کی اجازت دیکر بیورو کریسی کی بلا جواز مداخلت اور تاخیری حربوں کو ناکام بنائیں تاکہ ملک کے وسیع تر مفاد کی خاطر اضافی گندم اور گندم کی مصنوعات کو ایکسپور ٹ کیا جا سکے۔علاوہ ازیں پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن نے سعودی عرب میں ہونے والے دھماکوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے افسوسناک واقعہ قرار دیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ عالم اسلام میں اہمیت کے حامل ملک کے انتہائی اہم شہروں میں دہشت گردی کے ان افسوناک واقعات کے پس پردہ ہاتھوں کو بے نقاب ہونا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ ان انتہائی اہم مقامات پر دہشت گردوں کاپہنچنا سعودی حکومت کے ارباب اختیار اور سیکورٹی اداروں کیلئے نہ صرف سوالیہ نشان ہے بلکہ کھلا چیلنج ہے۔24 گھنٹوں میں ہونے والے 4بم دھماکوں کا ہونا سکیورٹی کا فقدان ہے ،جس پر سعودی حکومت کو خصوصی توجہ دینا ہوگی۔

مزید : صفحہ آخر