عید کی آمد،گرانفروش مافیا کی چاندی،سبزیاں،پھل عوام کی قوت خریدسے باہر

عید کی آمد،گرانفروش مافیا کی چاندی،سبزیاں،پھل عوام کی قوت خریدسے باہر

ملتان،کوٹ ادو،ٹھٹھہ صادق آباد،لودھراں،احمد پور شرقیہ،منڈی یزمان(خبرنگار ،نمائندگان)عید کی آمد کے ساتھ ہی گرانفروش مافیا کی چاندی ٹماٹر اڑھائی سو روپے کلو سے تجاوز کرگیا مرغی (بقیہ نمبر33صفحہ7پر )

کے ریٹ بھی آسمان سے باتیں کرنے لگے پھل بھی عوام کی پہنچ سے دور ہوگئے ملتان سے خبرنگار کے مطابق ضلعی انتظامیہ،پرائس کنٹرول مجسٹریٹس عید کی تیاریوں میں مصروف گرانفروش مافیا کی چاندی ہوگئی شہر بھر میں اشیائے خوردونوش،سبزیوں، پھلوں،مرغی کے گوشت اور ٹماٹر کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرتی رہیں اور عید سے قبل ہی لوٹ مار کا بازار عروج پر پہنچ گیا ضلع بھر میں رمضان بازاروں کے خاتمے اور پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کے غیر مؤثر ہونے کے باعچ ضلع ملتان میں گرانفروشی اور مہنگائی کا کاروبار زور پکڑ گیا تمام دکانداروں نے من مانے نرخوں پر اشیاء خوردونوش دھڑے سے فروخت کرنا شروع کردیں شہریوں کی عام مارکیٹ سے اشیاء ضروریہ خریدنے کے دوران ،ریٹ معلوم کرنے پر چیخیں نکل گئیں۔رمضان شروع ہونے سے قبل10روپے کل میں فروخت ہونے والا ٹماٹر گزشتہ روز160روپے کلو میں فروخت ہوتا رہا جبکہ مرغی کا گوشت بجھی 230سے250روپے تک فروخت کیا گیا اس طرح عیدالفطر کی مناسبت سے خشک میوہ جات کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرتی رہیں گری کی قیمت2800روپے فی کلو تک پہنچ گئی جبکہ بادام،چھوہارہ اور دیگر میوہ جات کی قیمتیں بھی عام دنوں کے مقابلے مٰں زائد رہیں واضع رہے کہ پنجاب حکومت کی ہدایت پر ضلعی حکومت کے رمضان المبارک کے آغاز میں ضلع بھر میں گرانفروشی کو کنٹرول کرنے کیلئے41پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے کارروائیاں کیں مگر گرونفروش مافیا کے احتجاج پر رمضان کے آخری عشرے میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹس بھی غیر مؤثر ہوکر رہ گئے اور عید سے قبل گرانفروشی مافیا کو شہریوں سے لوٹ مار کیلئے کھلی چھوٹ دے دی گئی اور ضلعی انتظامیہ نے بھی اس بدنظمی پر خاموشی اختیار کرلی۔کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق عیدالفطر کی آمد پر پشاور اور کوئٹہ سمیت دیگر مقامات سے ٹماٹر کی ترسیل نہ ہونے سے مارکیٹ میں ٹماٹر کا ریٹ آڑھائی سو روپے فی کلو سے بھی تجاوز کرگیا‘جبکہ منڈی میں10کلو ٹماٹر کا کریٹ 2ہزار روپے تک فروخت ہوتا رہا‘ پھلوں جس میں آم،آلو بخارہ،آڑو،خوبانی،فالسہ ڈبل ریٹ پر چلے گئے جبکہ فارمی مرغی کا گوشت بھی مہنگا ہوگیا جوکہ مارکیٹ میں270روپے کلو تک فروخت ہوتا رہا۔ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق عیدالفطر سے ایک روز قبل ٹھٹھہ صادق آبادوگردونواح کے چکوک میں مہنگائی،گرانفروشی کا جن بوتل سے باہر آگیا اور مہنگائی عروج پرس پہنچ رہی،ٹھٹھہ صادق آبادو نواحی علاقوں میں سبزی،پھل ،گوشت فروشوں ،کریانہ سٹور مالکان کی طرف سے اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں خودساختہ اضافہ کرتے ہوئے غریب عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹاگیا ،دوکاندرو ں نے ٹماٹر180روپے کلو ،سبز مرچ120روپے کلو،آلو،ادرک ،پیاز،لہسن ،سیب،کیلا،انگور،آم،چینی،گھی،آٹا،بیسن،دالیں،اور دیگر اشیائے خوردنوش کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کرتے ہوئے غریب عوا م کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ مار کی گئی۔لودھراں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق لودھراں اور گردونواح میں مہنگائی کا جن بے قابوہوتا جارہا ہے۔ پھلوں کے ساتھ ساتھ سبزیوں اور دیگر روزمرہ استعمال کی اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں پچاس روپے فی کلو تک اضافہ ہوگیا ہے ۔ رمضان میں10روپے کلو بکنے والا ٹماٹر اب 150روپے فی کلو میں فروخت ہورہاہے۔ برائیلر مرغی کا گوشت دوسوروپے فی کلو کے حساب سے فروخت ہوتارہا۔احمد پور شرقیہ سے سٹی رپورٹر کے مطابق عید کے مو قع پر گراں فروشی عروج پر فروٹ ، اور سبزیاں غریب کی پہنچ سے دور ہوگئیں۔ دوکانداروں نے ات مچادی ۔ تفصیل کے مطا بق عیدالفطر کے مو قع پر اس سا ل مہنگائی کے سابقہ تمام ریکارڈ ٹوٹ گئے ہیں۔ خاص طور پر فروٹ او ر سبزیوں کے نرخ عروج پر پہنچ گئے ہیں۔ ٹماٹر دو سو روپے کلو، آلوساٹھ روپے کلو، پیاز چالیس روپے کلو، آ م اسی سے سو روپے کلو ، خوبانی دو سو روپے کلو، آ لو بخارہ، تین سوروپے کلو، تک فروخت ہور ہاہے۔منڈی یزمان سے نامہ نگار کے مطابق رمضا ن با زار میں دس رو پے کمی کے سا تھ فر وخت ہو نے والا بڑا گو شت کھلی ما رکیٹ میں 240روپے کی بجا ئے 300روپے اور مر غی کا گر شت 190رو پے کی بجا ئے 280رو پے کھلے عام فر وخت کیا جا رہا ہے ۔اسی طر ح سبزیو ں میں ٹما ٹر 200رو پے سے 220رو پے جب کہ دیگر سبز یو ں کی قیمتو ں میں بھی بے پنا ہ اضا فہ کر دیا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر