پنجاب کے87لاکھ سے زائد مویشی پال حضرات کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ ہوگیا

پنجاب کے87لاکھ سے زائد مویشی پال حضرات کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ ہوگیا

  

لاہور(کامرس رپورٹر ) صوبائی محکمہ لائیو سٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ نے صوبہ پنجاب کے36 اضلاع کے87 لاکھ سے زائد مویشی پال حضرات کے مکمل ریکارڈ کو کمپیوٹرائزڈکر دیا ہے، اس مقصد کیلئے جدید ترین سافٹ ویئر ڈیزائن کیا گیا ہے جس کے تحت تمام کسانوں کا رئیل ٹائم ڈیٹا محض کمپیوٹر کی ایک کلک پر دستیاب ہے، اس کے ساتھ محکمہ لائیو سٹاک کی جانب سے دیگر صوبوں اور آسٹریلیا، جاپان و جنوبی کوریا کو بھی جدید رئیل ٹائم سسٹم پہ تکنیکی معاونت فراہم کی جا رہی ہے، یہ بات صوبائی وزیر لائیو سٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ میاں نعمان کبیر کو محکمہ لائیو سٹاک کے صدر دفتر میں منعقدہ اجلاس میں بتائی گئی، اجلاس میں مختلف افسران نے شرکت کی، اس موقع پر صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ لائیو سٹاک سیکٹر کا شعبہ زراعت میں حصہ58.3فیصد ہے، انہوں نے اس امر پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا کہ 26 ہزار دیہات میں مویشی پال حضرات کو جانوروں کی بیماریوں کے بارے میں متواتر آگاہی دی جا رہی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ دودھ کی پیداوار میں جدید عالمی بیسٹ پریکٹسسز بھی متعارف کروائی گئی ہیں، اس موقع پر صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ صوبہ بھر میں مویشیوں کی ویکسنیشن کا عمل جلد مکمل کر لیا جائیگا، محکمہ لائیو سٹاک کی353موبائل ڈسپنسریز، 4موبائل ویٹرنری لیبارٹریز،9335موبائل موٹر سائیکلز اور9سٹیٹ آف دی آرٹ موبائل ٹریننگ سکولز کسانوں کو ضروری معاونت مہیا کر رہے ہیں جبکہ مویشی پال حضرات کی سہولت کیلئے ہیلپ لائن قائم کی گئی ہے جو 24گھنٹے کام کرتی ہے، اس موقع پر صوبائی وزیر لائیو سٹاک نے خودکو عام شہری ظاہر کرتے ہوئے لائیو سٹاک کی ہیلپ لائن پر مویشیوں کے علاج معالجہ کے بارے میں رہنمائی طلب کی اور فوری رسپانس اور تکنیکی معاونت کی حامل اس موثر سروس پراپنے اطمینان کا اظہار کیا، انہوں نے عید قرباں کے موقع پر جانوروں کی کھالوں کو محفوظ رکھنے سے متعلق عوامی آگاہی مہم چلانے کی ہدایات جاری کیں۔

اور کہا کہ لائیو سٹاک جدید اصلاحات کے ذریعے چمڑے کی صنعت کو بھی بے پناہ فائدہ پہنچا سکتا ہے۔

مزید :

کامرس -