3ما ہ گزر گئے ، ہزاروں اساتذہ امتحانی ڈیوٹیو کے معاوضہ سے محروم

3ما ہ گزر گئے ، ہزاروں اساتذہ امتحانی ڈیوٹیو کے معاوضہ سے محروم

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)پنجاب بھر کے ہزاروں اساتذہ تین ماہ گرزنے کے باوجود امتحانی ڈیوٹیوں کے معاوضوں سے محروم ،پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کے زیر اہتمام پانچویں اور آٹھویں کے امتحانات میں ڈیوٹی اور پرچوں کی مارکنگ کرنے والے اساتذہ کو تاحال معاوضے نہیں دئیے گئے ۔پنجاب ایگزامینیشن کمیشن نے ابھی تک 2016-17 میں پیپر سپر مارکنگ و پوزیشن ہولڈرز طلباء کی مارکنگ کرنے والے درجنوں اساتذہ کے معاوضوں کی مد میں اڑسٹھ لاکھ روپے کی ادائیگی بھی تاحال نہیں کی ۔تفصیلات کے مطابق پنجاب ایگزامینیشن کے زیر اہتمام منعقد کئے جانے والے پانچویں اور آٹھویں کے امتحانات میں ڈیوٹیوں پر مامور اساتذہ کو تاحال معاوضوں کی ادائیگی نہ ہو سکی جس کی وجہ سے اساتذہ میں شدید بے چینی و اضطراب پایا جا رہا ہے۔ دوسری طرف امتحانی کلسٹر انچارج کا کہنا ہے کہ ہمیں ابھی تک پنجاب ایگزامینیشن کی طر ف سے اساتذہ کے معاوضوں کی ادائیگی کے لئے رقم نہیں ملی۔ پنجاب ٹیچرز یونین کے سیکرٹری جنرل رانا لیاقت نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابقہ سیکرٹری سکولز پنجاب ڈاکٹر اللہ بخش ملک نے بھی اس سلسلہ میں پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کو اساتذہ کے معاوضوں کی ادائیگی کا حکم دیا تھا لیکن پنجاب ایگزامینیشن کمیشن حکام اساتذہ کو امتحانی ڈیوٹی و مارکنگ کے معاوضوں کی ادایئگی نہیں کر سکے جبکہ پیک حکام کی جانب سے اپنے افسران کے ٹی ،اے ۔ڈی ،اے کو ترجیحی بنیادوں پر ممکن بنایا جاتا ہے ۔ لہذا نگران وزیر اعلی پنجاب اور سیکر ٹری سکولز پنجاب سے ہمارا مطالبہ ہے کہ پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کے معاملات کا نوٹس لیں ۔ پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کو ملنے والی کروڑوں روپے اندرونی و بیرونی فنڈز کا آڈٹ کروایا جائے ۔کیونکہ پوزیشن ہولڈرز بچوں کو انعامات دینے کے لئے فنڈز نہیں لیکن بھاری معاوضوں پر کنسلٹنٹ رکھنے کے لئے فنڈز موجود ہیں۔اساتذہ کو معاوضوں کی ادائیگی جلد از جلد ممکن بنائی جائے وگرنہ پنجاب ٹیچرز یونین پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کے دفتر کا گھیراؤ کرے گی۔

محروم

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -