میڈیکل کالج ایسوسی ایشن کی پرائیویٹ میڈیکل کالج میں ناقص امتحانی نظام کا نوٹس کی اپیل

میڈیکل کالج ایسوسی ایشن کی پرائیویٹ میڈیکل کالج میں ناقص امتحانی نظام کا ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر)خیبرپختونخواپبلک سیکٹرمیڈیکل کالج ایسوسی ایشن نے چیف جسٹس آف پاکستان اورچیف جسٹس پشاورہائی کورٹ سے پرائیویٹ میڈیکل کالجز میں ناقص امتحانی نظام اورسہولیات کی عدم موجودگی پرنوٹس لینے کی اپیل کردی۔گزشتہ روزپشاورپریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایسوسی ایشن کی صوبائی صدرڈاکٹراکبر،جنرل سیکرٹری ڈاکٹرفیصل بارکزئی اوردیگرکاکہناتھاکہ پرائیویٹ میڈیکل کالجزمیں جاری مافیاکی من مانیوں کامزمت کرتے ہیں نجی میڈیکل کالزمیں ناقص امتحانی نظام،ہسپتالوں کی عدم موجودگی اورٹیچنگ سٹاف کی کمی کی وجہ سے صحت کومذاق بنادیاہے ۔ان کاکہناتھاکہ جعلی رجسٹریشن پرنجی میڈیکل کالجزبنائے ہیں ان کالجزکے ساتھ پرائیویٹ ہسپتال اوردیگرسہولیات نہ ہونے کی وجہ سے داخلہ لینے پرمیڈیکل کے طلبہ کوکئی مشکلات کاسامناہوتاہے ۔ان کہناتھاکہ مخصوص افرادنے سینکڑوں سپیشلائزڈڈاکٹروں کاعدالت کے ذریعے داخلے روکنے کی کوشش کی ہے جس سے نجی میڈیکل کالجزسے فارغ التحصیل ڈاکٹروں کاوقت ضائع ہوتاہے بلکہ قومی خزانے کوبھی کروڑوں روپے کانقصان پہنچنے کااندیشہ ہے ۔عدالت میں اس کابھرپوردفاع کرئینگے ۔پرائیویٹ مافیاکوچندحکومتی نمائندوں کی پشت پناہی حاصل جس کوہرصورت میں ناکام بنائینگے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -