جندول ،بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن کردی

جندول ،بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن کردی

  

جندول (نمائندہ پاکستان )جندول تحصیل ثمرباغ میں بجلی لوڈشیڈنگ نے زندگی کی تمام سہولیت ختم کردیا ہے لوگوں کا کاروبار ٹھپ ہوگیا ہے گھروں،مسجدوں میں وضوں کیلئے پانی میسر نہیں ہے بجلی چوبیس گھنٹے لوڈشیڈنگ سے لوگ تنگ آچھکے ہے انتظامہ خاموش اور تمام سیاستدان اپنی ووٹ کے غم دن رات مصروف رہتے ہے کسی کے پاس عوامی مسائل سننے کیلئے ٹائم نہیں ہے گزشتہ گیارہ سال سے بجلی نمبروار کے علاو ہ بجلی کے ناروا لوڈشیڈنگ جندول کے عوام کا مقدر بن چکا ہے گزشتہ سال جماعت اسلامی کے طرف سے جندول کے لئے سات کروڑ لاگت سے بجلی ایکسپریس لائن کامنظوری ہو چکا تھا مگر وہ بھی تاحال مکمل نہیں ہوسکا اس کے علاوہ علاقے میں شدید گرمی اور خشک سالی سے تمام علاقوں کے قدرتی چشموں سمیت گھروں میں کنویں بھی خشک ہوچکے ہیں جس سے علاقے میں پینے کے صاف پانی کے قلت شروع ہوگیا ہے علاقائی لوگ روزمر زندگی کیلئے دور دروز علاقوں سے گاڑیوں پر پانی لاتے ہے علاقائی لوگ اس وقت بجلی ،پانی سمیت مختلیف مسائل سے کے شکار ہے اور صوبائی حکومت نے پانچ سال ٹائم پاس کرکے کسی علاقے کا مسائل حل ناکر سکا اسلئے سب ڈویژن جندول کے عوام نے چیف جسٹس اف پاکستان سے نوٹس لینے کا مطالبعہ کیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -