اگر ایون فیلڈ کا فیصلہ نوازشریف کے خلاف آتا ہے تو کتنے سال کیلئے جیل جانا پڑ سکتاہے ؟ قانونی ماہرین میدان میں آ گئے ، تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

اگر ایون فیلڈ کا فیصلہ نوازشریف کے خلاف آتا ہے تو کتنے سال کیلئے جیل جانا پڑ ...
اگر ایون فیلڈ کا فیصلہ نوازشریف کے خلاف آتا ہے تو کتنے سال کیلئے جیل جانا پڑ سکتاہے ؟ قانونی ماہرین میدان میں آ گئے ، تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) احتساب عدالت سابق وزیر اعظم نواز شریف، ان کے بیٹوں حسن اور حسین نواز، بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ آج سنائے گی جس پر قانونی ماہرین کا کہناہے کہ شق کے تحت زیادہ زیادہ سزا 14 سال ہے ۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق قانونی ماہرین کا کہناہے کہ نوازشریف،مریم نواز کیخلاف نیب سیکشن اے 95 کے تحت کارروائی ہوئی ،شق کے تحت عوامی عہدیدارآمدن سےزائد اثاثوں پرسزاکامرتکب ہوگا،شق کے تحت زیادہ سےزیادہ سزا 14 سال ہے ، شق کے تحت عوامی عہدیدار،اس کے بے نامی اداروں کی جائیدادضبط ہوگی، حسن اورحسین اشتہاری ہیں ،ان کاکیس الگ کردیاگیا،قانونی ماہرین حسن اورحسین کومفرور ہونے پر3،3 سال سزاہوسکتی ہے، نوازشریف ایون فیلڈ ریفرنس کافیصلہ لندن میں سنیں گے ۔ قانونی ماہرین کے مطابق حسن اورحسین کےدائمی وارنٹ پرمقدمہ داخل دفترہوجائےگا، مجرموں کوسرنڈرکرناہوگا،ان کی غیرموجودگی میں اپیل نہیں ہوسکتی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -