سونالی بیندرے کو میٹاسٹیٹک کینسر کی تشخیص، کینسر کی یہ قسم کیا ہوتی ہے؟ جانئے

سونالی بیندرے کو میٹاسٹیٹک کینسر کی تشخیص، کینسر کی یہ قسم کیا ہوتی ہے؟ جانئے
سونالی بیندرے کو میٹاسٹیٹک کینسر کی تشخیص، کینسر کی یہ قسم کیا ہوتی ہے؟ جانئے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بالی ووڈ اداکارہ سونالی بیندرے ان دنوں کینسر سے لڑ رہی ہیں۔ ڈاکٹروں کے مطابق اداکارہ کو میٹاسٹیٹک کینسر لاحق ہے۔ کینسر کی یہ قسم کیا ہوتی ہے؟ ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ڈاکٹروں نے بتایا ہے کہ ’’کینسر کے خلیے جس جگہ پیدا ہوتے ہیں جب وہاں سے جسم کے دیگر حصوں کی طرف پھیلنا شروع ہوتے ہیں تو اسے میٹاسٹیٹک کینسر کہا جاتا ہے۔اس پھیلاؤ میں کینسر کے خلیے جسم کے دیگر حصوں میں ٹیومرز بناتے اور پھیلتے چلے جاتے ہیں۔ یہ نئے ٹیومرز کو میٹاسٹیٹک ٹیومرز کہلاتے ہیں۔مثال کے طور پرکسی خاتون کو بریسٹ کینسر لاحق ہو اور پھر وہ کینسر اس کے پھیپھڑوں تک پہنچ جائے تو پھیپھڑوں میں ہونے والے اس کینسر کو میٹاسٹیٹک کینسر کہیں گے۔‘‘

ڈاکٹروں نے مزید بتایا کہ ’’جب کسی شخص کو لاحق کینسر چوتھے مرحلے میں داخل ہوتا ہے تو میٹاسٹیسس شروع ہو جاتا ہے۔ اس کا مطلب ہوتا ہے کہ کینسر کا مرض اب سنگین مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اور مرض اتنا شدید ہو چکا ہے کہ یہ جسم کے باقی حصوں میں پھیلنے کی صلاحیت حاصل کر چکا ہے۔میٹاسٹیٹک کینسر کے ٹیومر بھی ہو بہو کینسر کی اسی قسم سے مشابہہ ہوتے ہیں جو اس مریض کو ابتدائی طور پر لاحق ہوتی ہے۔یہی وجہ ہے کہ ڈاکٹروں کو عموماً یہ مرحلہ شروع ہونے پر کینسر کی ابتدائی جگہ کی تلاش میں مشکل پیش آتی ہے۔‘‘

مزید :

ڈیلی بائیٹس -تفریح -