نوازشریف فیصلے کے فوری بعد واپس آنا چاہتے تھے:لیگی ر ہنما طلال چودھری کا دعویٰ

نوازشریف فیصلے کے فوری بعد واپس آنا چاہتے تھے:لیگی ر ہنما طلال چودھری کا ...
نوازشریف فیصلے کے فوری بعد واپس آنا چاہتے تھے:لیگی ر ہنما طلال چودھری کا دعویٰ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چودھری نے کہا ہے کہ نواز شریف احتساب عدالت کے فیصلے کے فوری بعد واپس آنا چاہتے تھے لیکن اب پارٹی مشاورت کرکے ان کو بلائے گی ۔

جیونیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ ‘ ‘ میں گفتگوکرتے ہوئے طلال چودھری نے کہا ہے کہ ہم پہلے سے کہہ رہے تھے کہ انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہورہے۔ یہ ساری چیزیں الیکشن پر اثر انداز ہونگی ،اگر ساڑھے نوماہ گزر سکتے تھے تو پھر الیکشن سے قبل یہ 15دن نہیں نکل سکتے تھے ۔یہ فیصلہ الیکشن کے بعد آتا تو بہتر تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ کسی کے کہنے پر آیا ہے ۔ فواد احسن فواد اور احد چیمہ کو گرفتار کر کے مسلم لیگ ن کوکمزور کرنے کی کوشش کی گئی ۔ بلوچستان میں حکومت بھی ن لیگ کو کمزور کرنے کے لئے گرائی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ جنہوں نے میگا پراجیکٹ شروع کئے ان کی گرفتار یاں ہوتی ہیں جبکہ جنہوں نے کچھ نہیں کیا ان کو کو ئی نہیں پوچھتا ۔ ہم توہین نہیں کررہے بلکہ ہم تو درخواست کررہے ہیں۔ طلال چودھری نے کہا کہ نواز شریف کو یہ نظر آرہا تھا کہ پاکستان کی تایخ میں تو لٹکایا بھی گیا ہے لیکن یہ دیکھا جائے کہ اگر کوئی دہشت گرد بھی ضمانت مانگے تو اس کوبھی کچھ دن کیلئے مہلت مل جاتی ہے لیکن نواز شریف کو چند دن نہیں دیئے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف فوری واپس آنا چاہتے تھے لیکن پارٹی اب مشاور ت کرکے ان کو واپس بلائے گی اور وہ ضرور پاکستان آئیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف عوام کی بات کرتے ہیں اور عوام کو ان سے بڑی محبت ہے ۔

مزید :

قومی -