ٹیکس اور کار ڈیلرز۔احتجاج کا اعلان

ٹیکس اور کار ڈیلرز۔احتجاج کا اعلان

کراچی اور لاہور کے کار ڈیلرز بھی احتجاج پر ہیں اور انہوں نے نئے ٹیکسوں اور پابندیوں کی مخالفت کی اور مطالبہ کیا ہے کہ ان کو کاروبار کرنے دیا جائے اور پریشان کرنے کی بجائے مناسب سہولتیں بہم پہنچائی جائیں۔ کراچی کے کار ڈیلرز حضرات نے گزشتہ روز شو رومز بند کرکے احتجاج کیا انہوں نے بتایا کہ ایف بی آر نے اپنی پسند سے قواعد میں ترمیم کر دی اور کہا ہے کہ درآمدی کاروں پر عائد کسٹمز ڈیوٹی اور دیگر ٹیکسوں کی ادائیگی روپے کی بجائے ڈالروں میں کی جائے۔کراچی والے ڈیلر حضرات کہتے ہیں۔ یہ کیسے ممکن ہے، اس طرح تو کار ڈیلروں کو ڈالر مہنگے داموں خریدنے پر مجبور کیا جا رہا ہے اس سے ڈالر کی بلیک بھی بڑھ جائے گی۔ اس طرح کاروبار ممکن نہیں۔لاہور کے ڈیلرز حضرات نے اپنے سابقہ مطالبات پر بھی اصرار کیا اور کہا کہ ان کے کاروبار کو بھی دوسرے کمرشل درآمد کنندگان کے مطابق درجہ دیا جائے اور ساری سہولتیں بھی دی جائیں کہ یہ امتیاز ہے۔ کراچی اور لاہور والوں نے الگ الگ بیانات کے ذریعے واضح کیا کہ ان کے مطالبات نہ مانے گئے تو اگلے ہفتے سے تمام شو رومزبند کرکے تالے لگا دیئے جائیں گے کہ ایف بی آر والے تو نت نئے ٹیکس لگاتے چلے جا رہے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے ابھی گزشتہ روز ہی تاجر حضرات کے لئے گداز اور نرم پہلو کا اظہار کیا اور ان کو تمام ممکنہ سہولتیں مہیا کرنے کا بھی اعلان کیا ہے لیکن ایف بی آر والے پریشان کر رہے ہیں اور بعض نئے ٹیکس شامل کر چکے ہیں۔تاجر حضرات کے مطالبات اور ان کی پریشانیوں پر غور کرکے جلد حل کرنے کی تیزتر کوشش ہی ان کا جواب ہے کہ تجارت پیشہ حضرات کے قدم سے دنیا آباد ہے۔

مزید : رائے /اداریہ