ملزم عبدالغنی مجید 7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

ملزم عبدالغنی مجید 7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

اسلام آباد (این این آئی) احتساب عدالت نے جعلی اکاﺅنٹس کیس میں گرفتار ملزم عبدالغنی مجید کو 7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر تے ہوئے 12 جولائی کو ملزم کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا ہے ۔ جمعہ کو اسلام آباد کی احتساب عدالت(بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

میں جعلی اکاو¿نٹس ،میگا منی لانڈرنگ کیس میں عبدالغنی مجید کو نیب کی جانب سے جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر جج محمد بشیر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ملزم کا پہلا ریمانڈ 26 جون کو 9 روزہ دیا گیا تھا، ملزم اومنی گروپ کی مختلف کمپنیز کے اونر ہیں۔نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ملزم سے مزید تفتیش کرنی ہے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔ وکیل صفائی کی جانب سے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی مخالفت کی گئی ۔ وکیل صفائی نے کہاکہ تفتیشی افسر کیا چاہتا ہے، ای میلز کا پوچھا گیا بتادیا گیا، کمپنیز سے تعلق کا پوچھا گیا بتا دیا گیا، اب نیب کو جسمانی ریمانڈ تفتیش کیلئے نہیں پریشر ڈالنے کیلئے لیا جا رہا ہے۔ وکیل صفائی نے کہاکہ نیب پہلے ریفرنس دائر کرتے ہیں پھر تفتیش کرتے ہیں۔وکیل صفائی نے کہاکہ پارتھینن کمپنی نے قرضہ لیا، اگر قرضہ لینا جرم ہے تو پورا پاکستان مجرم ہے۔ایک کمپنی نے قرضہ لیا اور آگے کسی کمپنی کر قرضہ دے دیا تو اس میں جرم کیا ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ملزمان کی جانب سے پارتھینن سے تعلق سے انکار کیا گیا ہے، ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں عبدالغنی مجید کو کل گرفتاری ڈالی ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے استدعا کی کہ ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں بھی تفتیش کرنی ہے،جسمانی ریمانڈ پر حوالے کیا جائے۔وکیل صفائی کی جانب سے ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں جسمانی ریمانڈ کی مخالفت کی گئی عدالت نے ملزم عبدالغنی مجید کو7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر تے ہوئے 12 جولائی کو ملزم کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا ۔

عبدالغنی مجید

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...