سکالر ڈاکٹر سنبل حلیم نے پبلک اوپن ڈیفنس میں اپنے مقالے کا کامیابی سے دفاع کیا

سکالر ڈاکٹر سنبل حلیم نے پبلک اوپن ڈیفنس میں اپنے مقالے کا کامیابی سے دفاع ...

مردان( بیورورپورٹ) شعبہ زوالوجی کی سکالر ڈاکٹر سنبل حلیم نے عبدالولی خان یونیورسٹی مردان میں پبلک اوپن ڈیفینس میں اپنے مقالے کا کامیابی سے دفاع کیا۔وہ عبدالولی خان یونیورسٹی مردان کے شعبہ زوالوجی سے پی۔ایچ۔ڈی مکمل کرنے والی پہلی سکالر ہے ڈاکٹر سنبل حلیم مردان کے ایک علمی گھرانے سے تعلق رکھتی ہے۔ وہ علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی مردان کے سابقہ ریجنل کوارڈنیٹر/سابق سب ڈویژنل ایجوکیشن آفیسر مردان ممتاز ماہر تعلیم عبدالحلیم کی صاحبزاد ی ہے۔ڈاکٹر سنبل حلیم نے اپنی تعلیمی کیرئیر میں شاندار کامیابی کے نتیجے میں گولڈ میڈلز بھی حاصل کیے ہیں۔ وہ آج کل کوہاٹ یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے شعبہ زوالوجی میں بطور لیکچرار اپنے فرائض انجام دے رہی ہے ڈاکٹر سنبل حلیم نے اپنی کامیابی اللہ تعالیٰ کے خصوصی فضل و کرم ، والدین کی دعاﺅں اور اپنے سپروائزر شعبہ زوالوجی عبدالولی خان یونیورسٹی مردان کے چیئر پرسن ڈاکٹر صدف نیاز ،شریک سپروائزر قائداعظم یونیورسٹی اسلام آبادکی ڈاکٹر نویدہ قریشی اورعبدالولی خان یونیورسٹی کے فیکلٹی آف کیمکل اینڈ لائف سائنسز کے ڈین ڈاکٹر سلطان ایاز کی بہترین رہنمائی کا نتیجہ قرار دیا۔ یاد رہے کہ اسلامیہ یونیورسٹی آف بہاولپور کے پروفیسر ڈاکٹرعبدالغفار نے بطور ایکسٹرنل ایگزامنر شرکت کی۔ڈاکٹر سنبل حلیم کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ اُس کی Thesisامریکہ اور چائنہ میں Evaluate ہوئے۔پی ایچ ڈی سکالر کی تھیسز کا عنوان

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...