قطر سے 50کرو ڑ ڈالر ملنے کے باوجود زرمبادلہ کے ذخائر میں 90لاکھ ڈالر کمی: سٹیٹ بینک

قطر سے 50کرو ڑ ڈالر ملنے کے باوجود زرمبادلہ کے ذخائر میں 90لاکھ ڈالر کمی: سٹیٹ ...

کراچی(آن لائن) حکومت نے گزشتہ مالی سال کی تیسری سہ ماہی میں قرض سروسنگ کی ادائیگی کے طور پر 2ارب 34کروڑ 60لاکھ ڈالر کی ادائیگی کردی۔سٹیٹ بینک کے جاری اعداد و شمار کے مطابق حکومت نے مالی سال 19ء کے پہلے 9ماہ میں 7ارب 22کروڑ 90 ڈالر کی ادائیگیاں کیں، جو مالی سال 18کی مجموعی ادائیگیوں سے تھوڑی کم تھیں۔غیر ملکی زرمبادلہ میں پہلے سے ہی کمی کا سامنا کرنے والی حکومت کے لیے بڑھتے ہوئے قرض سروسنگ اخراجات تشویش کا باعث بن چکے ہیں۔اگر حکومت چوتھی سہ ماہی کے دوران قرض سروسنگ کی مد میں مزید ڈھائی ارب ڈالر کی ادائیگی کرتی ہے تو مجموعی ادائیگیاں 10ارب ڈالر تک پہنچ جائیں گی، پہلی تین سہ ماہی کے دوران مجموعی ادائیگیوں میں 5 ارب 18 کروڑ 40 لاکھ ڈالر بطور پرنسپل اور 2 ارب 4 کروڑ 50 لاکھ ڈالر سود شامل ہے۔مرکزی بینک نے اعلان کیا کہ 28جون پر ختم ہفتے کے دوران قطر سے 50کروڑ ڈالر وصول ہونے کے باوجود سٹیٹ بینک کے غیرملکی زرمبادلہ میں کمی آئی۔50 کروڑ ڈالر قطر سے آنیوالے 3ارب ڈالر کے حصے میں سے تھے جبکہ مہمان ملک کی یہ رقم سٹیٹ بینک کے اکاؤنٹ میں رکھی جائے گی۔سٹیٹ بینک نے کہا کہ بیرونی قرضوں اور دیگر آفیشل ادائیگیوں سے متعلق اکاؤنٹ آؤٹ فلو میں اضافے کے بعد سٹیٹ بینک کے ذخائر ہفتے کے دوران 90لاکھ ڈالر تک کم ہوئے۔28جون تک سٹیٹ بینک کے غیرملکی زرمبادلہ کے ذخائر 7ارب 27کروڑ 20لاکھ ڈالر پر تھے جبکہ کمرشل بینکوں کے ذخائر 7ارب 17کروڑ ڈالر پر موجود تھے۔جس سے ملک کل ذخائر 14ارب 44کروڑ 30لاکھ ڈالر ہوگئے۔

سٹیٹ بنک

مزید : صفحہ اول


loading...