ملزم عبدالغنی مجید 7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

ملزم عبدالغنی مجید 7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

اسلام آباد (این این آئی) احتساب عدالت نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار ملزم عبدالغنی مجید کو 7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر تے ہوئے 12 جولائی کو ملزم کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ جمعہ کو اسلام آباد کی احتساب عدالت میں جعلی اکاؤنٹس،میگا منی لانڈرنگ کیس میں عبدالغنی مجید کو نیب کی جانب سے جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر جج محمد بشیر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ملزم کا پہلا ریمانڈ 26 جون کو 9 روزہ دیا گیا تھا، ملزم اومنی گروپ کی مختلف کمپنیز کے اونر ہیں۔نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ملزم سے مزید تفتیش کرنی ہے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔ وکیل صفائی کی جانب سے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی مخالفت کی گئی۔ وکیل صفائی نے کہاکہ تفتیشی افسر کیا چاہتا ہے، ای میلز کا پوچھا گیا بتادیا گیا، کمپنیز سے تعلق کا پوچھا گیا بتا دیا گیا، اب نیب کو جسمانی ریمانڈ تفتیش کیلئے نہیں پریشر ڈالنے کیلئے لیا جا رہا ہے۔ وکیل صفائی نے کہاکہ نیب پہلے ریفرنس دائر کرتے ہیں پھر تفتیش کرتے ہیں۔وکیل صفائی نے کہاکہ پارتھینن کمپنی نے قرضہ لیا، اگر قرضہ لینا جرم ہے تو پورا پاکستان مجرم ہے۔ایک کمپنی نے قرضہ لیا اور آگے کسی کمپنی کر قرضہ دے دیا تو اس میں جرم کیا ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ ملزمان کی جانب سے پارتھینن سے تعلق سے انکار کیا گیا ہے، ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں عبدالغنی مجید کو کل گرفتاری ڈالی ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے استدعا کی کہ ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں بھی تفتیش کرنی ہے،جسمانی ریمانڈ پر حوالے کیا جائے۔وکیل صفائی کی جانب سے ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں جسمانی ریمانڈ کی مخالفت کی گئی عدالت نے ملزم عبدالغنی مجید کو7 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر تے ہوئے 12 جولائی کو ملزم کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا۔

عبدالغنی مجید

آٹھ شعروں کی غزل پر ٹیکس کاٹا جائے گا

بڑھ گیا خرچہ، موبائل فون کا اور ٹیکس کا

اتنے پیسوں میں کہاں سے گھر میں آٹا جائے گا

حکم جاری ہوگیا ہے اب وفاقی ٹیکس کا

آٹھ شعروں کی غزل پر ٹیکس کاٹا جائے گا

حسرت دیدار پر، اشکوں کی طغیانی پہ ٹیکس

ناظم بزم سخن دے دے، اضافہ ٹیکس کا

وہ جو نلکوں میں نہیں آتا، اسی پانی پہ ٹیکس

اک لفافہ شاعری کا، اک لفافہ ٹیکس کا

کوچہئ جاناں کی لمبائی پہ چوڑائی پہ ٹیکس

اے مرے محنت کشو! دن رات مزدوری کرو

عاشق ناشاد کی کمزور بینائی پہ ٹیکس

پیٹ کے دوزخ سے پہلے، تم یہ جرمانہ بھرو

شوہر مظلوم کی دل پھینک آزادی پہ ٹیکس

اپنی قسمت میں نہیں ہے کوئی دن آرام کا

ایک شادی کی رعایت، دوسری شادی پہ ٹیکس

تین ہفتے ٹیکس کے ہیں، ایک ہفتہ کام کا

طفل دوئم پہ جب این او سی طلب فرمائیں گے

اے کنوارو! وصل کی چاہت سے پہلے مال دو

پہلے بچے کے بقایا جات مانگے جائیں گے

ورنہ اپنی شادیوں کو التوا میں ڈال دو

ٹیکس زردہ پر اگر دے دو تو بریانی فری

صرف پاکستانیوں پر ٹیکس، افغانی فری

اور سب کو ہے معافی صرف بدحالوں پہ ٹیکس

شاعروں پہ، منشیوں پہ اور قوالوں پہ ٹیکس

خالد عرفان (نیویارک)

مزید : صفحہ آخر


loading...