رویت ہلال کمیٹی کا اعلان مستند،سائنسی قمری کیلنڈرناکام، مفروضہ ثابت

رویت ہلال کمیٹی کا اعلان مستند،سائنسی قمری کیلنڈرناکام، مفروضہ ثابت

لاہور(سٹی رپورٹر)تمام قومی اخبارات اور سرکاری و نجی اداروں میں یکم ذیقعد 5 جولائی بروز جمعہ قرار پائی جبکہ وزارت سائنس کے بنائے گئے قمری کیلنڈر میں یکم ذیقعد بروز جمعرات 4 جولائی درج ہے جسے فالو ہی نہیں کیا گیا بلکہ مختلف مکتبہ فکر کے علماء نے فواد چودھری کی جانب سے پیش کر دہ قمری کیلنڈر کو مفروضے پر مبنی ایک ناکام کیلنڈر قراردے دیا۔ تفصیلات کے مطابق مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب کی جانب سے اعلان کیا گیا کہ ذیقعد کا چاند نظر نہیں آیا لہٰذا 4 جولائی کو 30 شوال جبکہ جمعہ 5 جولائی کو یکم ذیقعد ہو گی جبکہ دوسری جانب وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کی جانب سے پیش کردہ قمری کلینڈر کے مطابق 4 جولائی کو یکم ذیقعد 1440ھ ہے۔اس حوالے روزنامہ ”پاکستان“ کے نمائندے سے گفتگو کر تے ہوئے اسلامی نظریاتی کونسل کے ممبر اور جامعہ نعمیہ کے سربراہ علامہ راغب نعیمی کا کہنا ہے کہ مفتی منیب الرحمن چاند دیکھ کر اور اس کی شہادتیں مو صول ہونے کے بعد تاریخ کا اعلان کر تے ہیں جبکہ فواد چودھری کا قمری کلینڈر صرف گمان پر مبنی ہے جس کی کو ئی وقعت نہیں۔ ان کا یہ قمری کلینڈر پہلے ہی مہینے پٹ گیا،وہ صرف پیش گوئی ہے اور پیش گوئی ہمیشہ درست ثابت نہیں ہوتی جبکہ مفتی منیب الرحمن صیحح صرف شریعت کے مطابق اعلان کرتے ہیں۔ ہم کسی بھی صورت فواد چودھری کے قمری کلینڈر پر اعتماد نہیں کر تے اور نہ ہی پاکستان کی عوام کو اس قسم کی چیزوں پر بھروسہ کرناچاہئے۔

مفروضہ ثابت

مزید : صفحہ آخر


loading...