”سینئر ہونے کے باوجود ورلڈکپ میچوں میں آپ کو ڈراپ کیا گیا، اس پر آپ کیا کہیں گے“شعیب ملک نے ایسا شاندار جواب دیدیا کہ مخالفین بھی داد دیں گے

”سینئر ہونے کے باوجود ورلڈکپ میچوں میں آپ کو ڈراپ کیا گیا، اس پر آپ کیا کہیں ...
”سینئر ہونے کے باوجود ورلڈکپ میچوں میں آپ کو ڈراپ کیا گیا، اس پر آپ کیا کہیں گے“شعیب ملک نے ایسا شاندار جواب دیدیا کہ مخالفین بھی داد دیں گے

  


لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے آل راﺅنڈر شعیب ملک اپنے کیرئیر کا آخری ورلڈکپ کھیلنے کے بعد ون ڈے انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائر ہو گئے ہیں جنہوں نے گزشتہ روز بنگلہ دیش کیخلاف میچ کے بعد پریس کانفرنس میں صحافیوں کے مختلف سوالات کے جوابات دئیے۔ اس دوران ایک صحافی نے سوال پوچھا کہ ”ٹی 20 میں یقینا آپ کی کارکردگی کافی اچھی ہے لیکن ون ڈے میں بھی آپ کی کارکردگی بہت اچھی تھی اور آپ مکی آرتھر کے سب سے بااعتماد بلے باز تھے جو میچ کو آگے لے کر جا سکتے تھے لیکن ورلڈکپ شروع ہوا اور پھر دو سے تین میچوں کے بعد آپ کو ڈراپ کر دیا گیا، اب تو آپ ریٹائر ہو گئے لیکن کیا آپ آئندہ کیلئے ٹیم مینجمنٹ یا کرکٹ بورڈ کوبتانا چاہیں گے کہ سال ڈیڑھ سال سے میچ جتوانے والے سینئر کھلاڑی کو اگر ساتھ رکھنا ہے تو پھر اسے پورے چانس دینا چاہئیں؟“ شعیب ملک نے اس سوال پر جواب دیا کہ ”جب ایسا وقت ہو کہ آپ ہار رہے ہوں اور ٹیم سے بالخصوص سینئر کھلاڑیوں سے توقعات بھی وابستہ ہوں لیکن پھر بھی کارکردگی نہ آئے تو ضرور تبدلی کرنی چاہئے اور اس میں کوئی بری بات نہیں ہے۔ آپ یہ بھی تو دیکھیں کہ مجھے ڈراپ کئے جانے کے بعد ٹیم جیتی ہے اور ہم نے چار میچ لگاتار جیتے۔ میری جگہ جو ٹیم میں شامل ہوا اس نے بہترین کارکردگی بھی دکھائی، بجائے اس کے کہ میں یہاں تنقید کروں کہ سینئر کو چانس دینا چاہئے تھا، میرے خیال سے ٹیم کیلئے جو بہتر ہو، اس حوالے سے آگے بڑھنا چاہئے، بس ایک چیز کا افسوس ہے کہ دو میچوں کو لے کر کسی کے بارے میں رائے قائم کر لینا بہت زیادہ ہوتا ہے، لیکن کوئی بات نہیں، ہر ایک کی اپنی اپنی رائے ہے۔“

مزید : کھیل


loading...